06:45 pm
حسن نثار نے گلف نیوز کی پاکستان اور پاکستانیوں کے بارے میں رائے بیان کر دی

حسن نثار نے گلف نیوز کی پاکستان اور پاکستانیوں کے بارے میں رائے بیان کر دی

06:45 pm

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) معروف ملکی صحافی اور تجزیہ کار حسن نثارکہتے ہیں کہ خلیج کے ایک اہم اخبار گلف ٹائمز نے پاکستان اور پاکستانیوں کے حوالے سے کچھ انتہائی اہم اور حوصلہ افزا پیشگوئیاں کی ہیں۔ اپنے ایک ویڈیو بیان میں حسن نثارکہتے ہیں کہ اس میں کہی گئی پہلی بات یہ ہے کہ پاکستان 21ویں صدی میں دنیا کی بڑی معیشتوں میں سے ایک بننے کی ممکنہ صلاحیت رکھتا ہے۔لیکن سوال یہ ہے کہ اس ممکنہ کو یقینی کون بنائے گا۔ وہ سیاستدان جو اس وقت اقتدار میں ہیں ۔یا وہ جو ان سے پہلے تھے
یا وہ جو ان سے بھی پہلے اقتدار میں تھے۔ دوسری اہم بات یہ لکھی گئی ہے کہ پاکستانی دنیاکی چوتھی ذہین ترین قوم ہیں۔ میں یہ کہتا ہوں کہ ہمارے لوگوں کو بنیادی انسانی ضروریات فراہم کر دی جائیں ۔ انھیں معاشی تحفظ فراہم کردیا جائے۔ ان کی بھوک اور غریبی کو کسی حد تک مٹا دیا جائے توآپ سوچیں دنیا کی چوتھی ذہین ترین قوم کیا کچھ نہیں کر سکتی۔تیسری بات میرے لیے بڑی خوشگوار بھی تھی اور میں دل بھی بہت دکھا کہ اے اور او لیول کے کیمبرج امتحانات میں پاکستانی طلبا نے ٹاپ کیا اور ریکارڈ قائم کیا۔دکھ کی بات یہ ہے کہ اس ملک میں بچوں کی ایک بڑی تعداد کو سکول جان نصیب نہیں ہے۔ اور پھر ایک بڑی تعداد ایسی ہے جن کا سکول جانا نہ جانا ایک برابر ہےانھیں کوالٹی ایجوکشن فراہم نہیں کی جا رہی ۔ یہ جو کرتے دھرتے ہیں یہ ایک بہت بڑے معاشرتی جرم کا ارتکاب کر رہے ہیں۔ہم اس بدنصیب کسان کی طرح ہیں جس کے پاس سو مربع زمین ہے لیکن وہ اس میں سے صرف ایک مربع زمین کو کاشت کرسکتا ہے۔ آپ زرخیز سے زرخیز زمین کو بھی کاشت نہ کریں تو وہ بنجر ہو جائے گی۔اسکے بعد اہم بات یہ ہے کہ نامساعد مالی حالات برداشت کرکے اور پوری دنیا کی مخالفت مول لے کر بھی ہم نے ایٹمی اثاثے بنائے۔ میزائل ٹیکنالوجی حاصل کی۔ دنیا کی بہترین اور پروفیشنل مسلح افواج میں ہم چھٹے نمبر پر ہیں۔اگر کوئی توجہ دینے والا تو ہم سرجیکل آلات کے شعبے میں دنیا کے ٹاپ دو یا تین ممالک میں شامل ہو سکتے ہیں۔پاکستان دنیا کاپچاس فیصد فٹ بال بنا رہا ہے۔سیاحت کے نکتہ نگاہ سے دیکھا جائے تو پاکستان کے پاس دنیا کے بلند ترین پہاڑی سلسلے ہیں۔اس کا مطلب یہ ہوا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے تو اس ملک پر اپنا خاص کرم کر رکھا ہے۔ لیکن 72سالوں سے اس ملک کی اشرافیہ اور ارباب اختیار یہاں کے باصلاحیت لوگوں پر ظلم کررہے ہیں۔تو بات یہ ہے کہ جب تربیت دی جائے۔ درست راستہ دکھایا جائے، ٹرین کیا جائے یا گروم کیا جائے تو بندر، شیر ، گھوڑے،زیبرے بھی سرکس میں باکمال پرفارمنس دینا شروع کر دیتے ہیںہم تو پھر بھی انسان ہیں۔آخر میں ایک قطع عرض کرنا چاہوں گا۔

تازہ ترین خبریں