02:19 pm
سردار اختر مینگل کے بعد حکومت کا سب سے بڑااتحادی بھی ناراض

سردار اختر مینگل کے بعد حکومت کا سب سے بڑااتحادی بھی ناراض

02:19 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کو اس وقت اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے ٹف ٹائم کا سامنا ہے۔جمعیت علمائے اسلام (ف) کے اعلان کردہ آزادی مارچ میں مسلم لیگ ن نے گذشتہ روز بھرپور شرکت کا اعلان کر دیا ہے جس کے بعد سے حکومتی صفوں میں بھی بے چینی پیدا ہو گئی ہے۔ ایک طرف جہاں حکومت موجودہ حالات میں اپوزیشن کی جانب سے دئے جانے والے ٹف ٹائم سے پریشان ہے وہیں دوسری جانب وفاقی حکومت نے اپنے اتحادیوں نے بھی حکومت کو پریشان کرنا شروع کر دیا ہے۔
اس بات کا دعویٰ سینئرصحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ اہم کیو ایم کے رہنماؤں نے بھی عمران خان کی حکومت پرعدم اعتماد کا اظہار کر دیا ہے۔عارف حمید بھٹی نے کہا کہ حکومت کی نا قص کارکردگی، آپس کے اختلافات اور اپوزیشن کے مارچ کے اعلان کے بعد آخر کار اہم حکومتی شخصیت نے مدد گاروں کی مدد کے کے لیے رابطے بڑھا دیے ہیں۔سینئرصحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی کے اس ٹویٹ کے بعد حکومتی صفوں میں مزید چہ مگوئیاں ہونا شروع ہو گئی ہیں جبکہ حکومتی نمائندوں کی پریشانی میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔ خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے اقتدار میں آنے کے بعد سے ہی حکومت کو اتحادی جماعتوں کی جانب سے ٹف ٹائم دیا گیا۔پہلے مسلم لیگ ق اور بی این پی مینگل نے حکومتی جماعت سے اپنے تحفظات کا اظہار کیا اور اپنے مطالبات حکومت کے سامنے رکھ دئے۔ تاہم ایم کیو ایم پاکستان نے بھی حکومت سے اپنے اختلافات کا کھُل کا اظہار کر دیا تھا جس کے بعد حکومت نے اتحادیوں کو اعتماد میں لینے کے لیے ملاقاتیں بھی کی تھیں تاہم اب ایک مرتبہ پھر سے حکومت کی اتحادی جماعتیں حکومت کو ٹف ٹائم دے رہی ہیں۔

تازہ ترین خبریں