05:44 pm
  زردا ری اور نواز شریف کو لوگ مسترد کر  چکے ہیں،مشتاق  احمد غنی

زردا ری اور نواز شریف کو لوگ مسترد کر چکے ہیں،مشتاق احمد غنی

05:44 pm

پشاور(آن لائن) سپیکر کے پی کے اسمبلی مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہ ریاست کے خلاف جتھے بنانے والے ردا ری اور نواز شریف کو لوگمسترد کر چکے ہیں اور عنقریب مہنگائی پر قابو پالیا جائے گا اور عوام کو ریلیف دینا حکومت کی اولین ترجیح ہے ملک کی ترقی اور قرضوں سے نجات کے لئے صاحب ثروت لوگوں کو اب ہر حال میں ٹیکس دینا ہو گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے جلال بابا آڈیٹوریم ایبٹ آباد میں منعقدہ ایک خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت ایبٹ آباد کی تعمیر و ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے اور آئندہ بیس سے پچیس دنوں تک ھزارہ ایکسپریس وے کو عوام کے لیے کھول دیا جائے گا جب کے آئندہ مارچ تک حویلیاں سے دھمتوڑ تک بائی پاس کا بھی آغاز کردیا جائے گا
تاکہ ایبٹ آباد شاہراہ ریشم پر ٹریفک کے بوجھ کو کم کیا جا سکے جب کے چھ کروڑ روپے کی لاگت سے ایبٹ آباد میں میوزیم کا کام بھی اپنے آخری مراحل میں ہے اس کے علاوہ 1122 کا دائرہ پورے صوبے تک پھیلایا جائے گا اور ایبٹ آباد میں مزید اس کے سٹیشن کا قیام بھی عمل میں لایا جائے گا تاکہ عوام کو فوری ایمرجنسی ریلیف فراہم کیا جاسکے انہوں نے کہا کہ ہم پر سلیکٹیڈ کے الزامات لگانے والوں کو خود اپنے گریبانوں میں جھانکنا چاہیے کیونکہ آج ملک کی جو صورتحال ہے وہ زرداری اور نوازشریف حکومتوں کی نااہلی کی وجہ سے عوام اس کی سزا بھگت رہے ہیں ہمارے لیے بھی بہت سے راستے موجود تھے لیکن عمران خان اس ملک کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کا تہیہ کر چکے ہیں اور اس کے اثرات اب عوام کے سامنے آنا شروع ہو چکے ہیں اور جلد یہ تمام ثمرات عوام تک منتقل کر دیے جائیں گے ان کا کہنا تھا کہ ان کا دھرنا چار حلقے کھولنے کے حوالے سے تھا جبکے مولانا صاحب سمیت اپوزیشن جماعتیں یہ بتائیں کہ وہ دھرنا کس مقصد کے لئے دے رہے ہیں قانون کے دائرے کے اندر رہتے ہوئے ہر ایک کو احتجاج کا ح حق حاصل ہے لیکن جس کسی نے بھی قانون شکنی کی اور ریاست سے ٹکرانے کی کوشش کی تو ریاست اتنی کمزور نہیں ہے ریاست ا سے کوئی نہیں ٹکرا سکتا انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کو بیرونی اور اندرونی بہت سارے چیلنجز کا سامنا ہے اور عمران خان کی قیادت میں حکومت ان چیلنجز سے نپٹتے ہوئے اس ملک کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے میں ضرور کامیاب ہوگی