03:28 pm
حکومت کاعوام کو بڑاجھٹکا، بجلی کی قیمت میں 2 روپے 97پیسے اضافےکا فیصلہ کرلیا

حکومت کاعوام کو بڑاجھٹکا، بجلی کی قیمت میں 2 روپے 97پیسے اضافےکا فیصلہ کرلیا

03:28 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) بجلی کی قیمت میں دو روپے97 پیسے فی یونٹ اضافے کا امکان ہے۔تفصیلات کے مطابق اضافہ ستمبر کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا جائے گا۔سینٹرل پاور پرچیزنگ کمپنی (سی سی پی اے) کے مطابق ستمبر میں پانی سے 37.09 فیصد، گیس سے 11.85 فیصد بجلی پیدا کی گئی۔اسی طرح ستمبر میں درآمدی ایل این جی سے 21.06 فیصد بجلی پیدا کی گئی۔رواں سال جولائی میں بھی بجلی کی قیمتوں میں 10 پیسے فی یونٹ اضافے کا نوٹی فکیشن جاری کیا گیا تھا۔نیپرا کے نوٹیفیکیشن کے مطابق بجلی کی قیمتوں میں اضافہ مئی کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا گیا تھا۔نیپرا نے ہدایت دی ہے کہ بجلی تقسیم کار کمپنیاں جولائی کے بجلی بلوں میں اضافہ صارفین سے وصول کریں
۔نوٹیفکیشن کے مطابق نیپرا نے گزشتہ مالی سال 2017-18کی ایڈجسٹمنٹس اور ڈسٹری بیوشن مارجن کے تحت بجلی مہنگی کرنے کی منظوری دی ہے۔لائف لائن صارفین اور ماہانہ 300 یونٹ تک استعمال کرنے والے گھریلو صارفین کیلئے بجلی کی قیمت نہیں بڑھائی گئی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق ماہانہ 300 یونٹ سے زیادہ بجلی استعمال کرنے والے صارفین کیلئے بجلی53 پیسے فی یونٹ مہنگی ہوگی جبکہ اس کا اطلاق کے الیکٹرک کے صارفین پر نہیں ہو گا۔ یاد رہے کہ گزشتہ ماہ بھی نیپرا نے جولائی کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں فی یونٹ بجلی ایک روپے 78 پیسے مہنگی کرنے کی منظوری دی تھی۔جب کہ دوسری جانب گذشتہ ہفتے پاور ڈویژن کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ملک میں بجلی کے شارٹ فال میں اضافہ ہوگیا ہے۔ پانی کے ذخائر میں کمی کے باعث تربیلا ڈیم اور منگلا ڈیم سے پانی کا اخراج مکمل طور پر بند کر دیا گیا ہے۔ پانی کا اخراج بند کرنے کے باعث تربیلا ڈیم کے تمام پاور ہاوسز بند ہو گئے ہیں۔ جبکہ منگلا ڈیم کے بیشتر پاور ہاوسز بھی بند ہو گئے ہیں۔تربیلا ڈیم اور منگلا ڈیم سے بجلی کی ترسیل میں کمی کے باعث ملک میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں بھی اضافہ ہو گیا ہے۔ بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں اضافے کے باعث شارٹ فال پوراکرنے کیلیے بند پڑے تھرمل پاور ہاؤس چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پاور ڈویژن کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ جوں ہی تھرمل پاور ہاؤسز سے بجلی سسٹم میں شامل ہوگی تو لوڈ شیڈنگ کم ہوجائیگی۔