06:16 pm
میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا نہ ہی کوئی بل پاس کردیا صرف ویڈیو ہی بنائی ہے،وزارت خارجہ کے آفس کس شخصیت کے بلانے پرگئی تھی

میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا نہ ہی کوئی بل پاس کردیا صرف ویڈیو ہی بنائی ہے،وزارت خارجہ کے آفس کس شخصیت کے بلانے پرگئی تھی

06:16 pm

اسلام آباد (ویب ڈیسک) ٹک ٹاک پر حریم شاہ کی بنائی گئی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر نیا محاذ کھول دیا ہے۔ٹک ٹاک گرل حریم شاہ کا وزارت خارجہ میں بنائی گئی وائرل ویڈیو پر ردِعمل سامنے آ گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق حریم خان کا نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا ہے کہ میں وزارت خارجہ کے آفس کس سے ملنے گئی یہ نہیں بتا سکتی۔حریم شاہ کا کہنا ہے کہ جس شخص نے مجھے وہاں بلایا تھا
اس کا نام نہیں بتا سکتی۔مجھے پتہ چلا کہ شاہ محمود قریشی صاحب آئے ہیں اس لیے گئی تھی تاہم وہاں پر ان سے ملاقات نہیں ہو سکی جس کے بعد میں نے آفس کے اندر جانے کی اجازت مانگی جو مجھے مل گئی ۔میں نے وہاں پر ویڈیو بنائی مجھے کسی نے نہیں روکا۔حریم شاہ نےکہا کہ میں اپنے ایک قریبی ذرائع کی مدد سے وزارت خارجہ جانے میں کامیاب ہوئی،مجھے وہاں پر روکا نہیں گیا بلکہ سپورٹ کیا گیا۔میں وزارت خارجہ اکیلے ہی گئی تھی۔وہاں پر موجود ایک شخص کو کہا کہ میری ویڈیوز اور تصاویر بنائے۔حریم شاہ کا مزید کہنا تھا کہ مجھے انکوائری کے حوالے تاحال کسی حکومتی شخصیت کی کال موصول نہیں ہوئی۔حریم شاہ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ میں نے کوئی گناہ نہیں کیا جو میں یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے سے ڈرتی۔وہاں پر کوئی تصویر بنانا یا ویڈیو بنانا کوئی غلط کام نہیں ہے۔حریم شاہ نے مزید کہا کہ میں کہیں بھی جاتی ہوں تو وہاں کی ویڈیو بنا کر اپلوڈ کر دیتی ہوں۔ویڈیو اپلوڈ کرنے کا مقصد کچھ اور نہیں تھا۔حریم شاہ نے کہا کہ میں نے وہاں جا کر کوئی بل پاس نہیں کیا نہ ہی کوئی دراز چھیڑا، صرف ویڈیو ہی بنائی تھی۔میڈیا ذرا سی بات کو بڑھا چڑھا کر پیش کردیتا ہے میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا۔اگر ویڈیو بنانے میں کوئی غلط بات ہوتی تو وہاں موجود متعلقہ افراد مجھے منع کرتے لیکن انہوں نے تو مجھے سپورٹ کیا۔خیال رہے کہ یہ پہلی مرتبہ نہیں کہ یہ ٹک ٹاک اسٹار کسی تنازع کی زد میں آئی ہیں بلکہ اس سے قبل ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ اور صندل خٹک کا معروف صحافی مبشر لقمان کے درمیان سامنے آنے والا تنازع عدالت تک پہنچ گیا تھا۔ہوا کچھ یوں تھا کہ ماہ اگست میں حریم شاہ اور صندل خٹک نے اپنے سوشل میڈیا اکاونٹس پر کچھ ایسی ویڈیوز شیئر کیں تھی، جس میں انہیں نامور اینکر مبشر لقمان کے ذاتی جہاز میں دیکھا گیا تھا۔ان ویڈیوز کے سامنے آنے کے بعد مبشر لقمان نے ان دونوں خواتین پر جہاز سے قیمتی سامان چوری کرنے کا الزام لگایا تھا۔تاہم بعد ازاں حریم شاہ اور صندل خٹک نے ایک نئی ویڈیو میں مشہور اینکر مبشر لقمان سے معافی مانگتے ہوئے انہیں 'وطن کا چمکتا دمکتا تارہ' قرار دیا تھا۔ساتھ ہی ان دونوں اسٹارز نے اپنی ویڈیو میں اینکر سے معافی مانگ کر اس معاملے کو یہی ختم ہونے کی امید کا اظہار کیا تھا لیکن بعد ازاں ٹی وی اینکر نے لاہور ہائی کورٹ میں دونوں خواتین سمیت پنجاب کے صوبائی وزیر فیاض الحسن چوہان کے خلاف بھی مقدمہ دائر کرنے کی درخواست دے دی تھی۔مبشر لقمان نے الزام لگایا تھا کہ فیاض الحسن چوہان کی ایما پر یہ دونوں خواتین ان کے جہاز میں آئیں اور قیمتی چیزیں چرالیں، جن میں لاکھوں روپے مالیت کے کیمرے اور دیگر سامان شامل ہیں۔علاوہ ازیں حریم شاہ اور صندل خٹک نے بھی لاہور کی ضلعی عدالت میں مبشر لقمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دائر کردی تھی۔