01:27 pm
نواز شریف کی طبیعت رات گئے کچھ خراب ہوئی تھی

نواز شریف کی طبیعت رات گئے کچھ خراب ہوئی تھی

01:27 pm

لاہور : صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد نے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف کی طبیعت کے بارے میں آگاہ کیا۔ تفصیلات کے مطابق نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے یاسمین راشد نے کہا کہ نواز شریف کی طبیعت رات گئے کچھ خراب ہوئی تھی جس پر کارڈیالوجسٹ کو بلایا گیا جس نے انہیں کچھ دوائیں دیں۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف صبح اُٹھے تو ان کی طبیعت میں بہتری آئی۔ انہوں نے بتایا کہ نوازشریف کے پلیٹ لیٹس 22 ہزار ہوگئے ہیں۔ پلیٹ لیٹس میں اضافے کا مطلب ہے کہ ان کی طبعت میں بہتری آ رہی ہے۔ اسٹرائیڈ دینے سے بلڈ شوگربڑھ گئی تھی۔ نواز شریف دل کے عارضہ میں مبتلا اور شوگر کے مریض ہیں۔
 
نواز شریف نے کل ڈاکٹر طاہر شمسی سے کہا کہ وہ علاج سے مطمئن ہیں۔جو بات ہو اُسے نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان سے بھی شئیر کیا جاتا ہے۔ ہم نواز شریف کو بہترین سہولیات فراہم کر رہے ہیں۔ لاہور ہائیکورٹ نے کہا ہے کہ آج کی رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے۔ عدالت میں جو رپورٹس دی گئی ہیں اس میں حکومت کا کوئی عمل دخل نہیں ہے۔ اُمید ہے کہ ڈاکٹر محمود ایاز تازہ رپورٹ بھی پہنچا دیں گے۔ کسی سے چھپایا نہیں گیا نواز شریف علیل ہیں۔میاں صاحب کی صورتحال سنگین ہے ، علاج جاری ہے ، اللہ بہتر کرے گا۔ ہم چاہتے ہیں کہ مریم نواز اپنے والد کا خیال رکھیں، وزیراعظم نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر مریم نواز کو والد کے پاس رہنے کی اجازت دی۔ وزیراعظم چاہتے ہیں کہ مریم بی بی ضرور اپنے والد کی تیمارداری کریں۔ انہوں نے کہا کہ ہم عدالتوں کا احترام کرتے ہیں ، عدالت سے جو بھی فیصلہ آیا اُسے من و عن تسلیم کیا جائے گا۔ وزیراعظم کی ہدایت ہے کہ کورٹ کا جو فیصلہ ہو گا اسے قبول کریں گے۔ صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد نے کہا کہ میں نے وزیراعظم عمران خان کے کہنے پر یہ پریس کانفرنس بُلوائی ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پریس کو بتا دیں کہ عدالت جو فیصلہ کرے گی ہم اسے تسلیم کریں گے۔

تازہ ترین خبریں