03:23 pm
کابینہ اجلاس میں فردوس عاشق اعوان حکومتی وزرا پر پھٹ پڑئیں

کابینہ اجلاس میں فردوس عاشق اعوان حکومتی وزرا پر پھٹ پڑئیں

03:23 pm


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ایک طرف پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی حکومت کو سیاسی محاذ پر اپوزیشن جماعتوں کے کڑے چیلنج کا سامنا ہے تو دوسری جانب خود حکومتی وزرا کی آپس کی لڑائیاں اور اختلافات سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں۔مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نےاپنے خلاف مبینہ سازش کا خدشہ ظاہر کر دیا ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان کا کہناتھا کہ پیمرا کے فیصلے پر خود حکومتی وزرا نے مجھ سے ایسا برتائو کیا
جیسے میں اپوزیشن میں ہوں۔وفاقی کابینہ کے اجلاس کےدوران وزیر اعظم کو آزادی مارچ او ر میاں نوازشریف کی خرابی صحت کے بعد پیدا شدہ سیاسی معاملات کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ۔ وزیراعظم نے امید ظاہر کی کہ اپوزیشن آزادی مارچ کے حوالے سے معاہدے کی پاسداری کرے گی۔ وزیراعظم نے یہ بھی ہدایات کیں کہ حکومت کسی بھی ڈیل کا حصہ نہیں ہے اس لئے نوازشریف کی صحت کے حوالے سے کوئی منفی بیانا ت نہ دیے جائیں ۔ اس موقع پر فردوس عاشق اعوان نے شکوہ کیا کہ ساتھی وزیرمجھ پر ایسے تنقید کرتے ہیں جیسے وہ اپوزیشن میں ہوں۔ ایسے لگتاہے میرے ساتھی وزرامیرے خلاف سازش کررہے ہیں۔ تاثر یہ جاتا ہے حکومت ایک پیج پر نہیں۔ فواد چودھری نے کہا کہ جب فیصلے کرکے منٹوں میں واپس لیے جائیں توحکومت کی سبکی ہوتی ہے۔ شیریں مزاری نے کہا کہ جمہوری حکومت میں کسی کی آواز نہیں دبائی جاتی۔اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ ان معاملات کو چھوڑیں ۔ ہمیں کئی اور چیلنجز کا سامنا ہے۔ اصل مسائل پرتوجہ دیں۔

تازہ ترین خبریں