05:03 pm
نواز شریف کی صحت سے متعلق ڈاکٹر ز پریشان

نواز شریف کی صحت سے متعلق ڈاکٹر ز پریشان

05:03 pm

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) ا پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کی صحت پر عالمی ممتاز طبی ماہرین سے مشاورت کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کی صحت کے حوالے سے بننے والے میڈیکل بورڈ نے مریض کے پلیٹ لٹس کی تعداد نہ بڑھنے پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔سابق وزیراعظم کی صحت کا جائزہ لینے کے لیے آج میڈیکل بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں اس سلسلے میں دنیا بھر کے ممتاز طبی ماہرین سے مشاورت کرنے کی تجویز پر اتفاق کیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ادویات اور انجیکشن کے باوجود پلیٹ لٹس نہ بڑھنا خطرناک ہے،لہذا صورتحال کے حوالے سے دنیا کے ممتاز ماہرین سے طبی رائے لی جائے گی،
ان کا کہنا تھا کہ میڈیکل بورڈ نواز شریف کے پلیٹ لٹس میں کمی کی وجوہات جاننے میں تاحال ناکام رہا ہے جس کے بعد بون میرو،پٹ اسکین اور لمپف نوڈز بائیو آپسی کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ نواز شریف کے خون میں شکر کی مقدار بہت زیادی آ رہی ہے جب کہ زیابطیس اور دل کے عارضہ سے بطی پیچیدگیاں بڑھ رہی ہیں۔ میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کی ادویات میں بھی ردوبدل کا فیصلہ کیا ہے۔خیال رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کسروسز اسپتال میں زیر علاج ہیں جہاں ان کا پچھلے نو روز سے علاج جاری ہے۔نواز شریف کے ذاتی معالج کے مطابق نواز شریف کی طبعیت سنبھل نہیں رہی۔آج میاں نواز شریف کو مسوڑوں سے خون آنے کی بھی شکایت ہوئی۔۔ سابق وزیراعظم نواز شریف کے جسم میں موجود پلیٹ لیٹس کی تعداد میں اُتار چڑھاؤ جاری ہے۔ تاہم اب میڈیا ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ نواز شریف کی طبیعت میں پہلے سے بہتری آئی ہے۔نواز شریف کے پلیٹس کی تعداد بھی 30ہزار ہو گئی ہیں۔ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی طبعیت میں کئی روز بعد بہتری دیکھنے میں آئی ہے۔نواز شریف کو دانتوں کے علاج کے لیے ڈینلٹل وارڈ منتقل کیا گیا تھا۔