09:41 am
ٓمولانا کو تمام تر اختیارات مل گئے

ٓمولانا کو تمام تر اختیارات مل گئے

09:41 am

اسلام آباد (ما نیٹرنگ ڈیسک)مولانا کو تمام تر اختیارات مل گئے ۔۔۔۔ جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو فیصلوں کا اختیار مل گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت ہونے والے طویل اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے رہبر کمیٹی کے فیصلوں اور تجاویز پر عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ جس کے بعد کنوینر رہبر کمیٹی اکرم خان درانی کو مولانا فضل الرحمان سمیت کئی ارکان کے سامنے طویل وضاحتیں دینا پڑ گئیں۔
مولانا فضل الرحمان نے رہبر کمیٹی کے کنوینر اکرم درانی سے گلہ کرتے ہوئے کہا کہ رہبر کمیٹی نے یہ کس قسم کی تجاویز مرتب کی ہیں ؟ مولانا فضل الرحمان نے اکرم خان درانی کو فوری طور پر آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) بلانے کا انتظام کرنے کی ہدایت کر دی۔ جس کے بعد انہوں نے تمام حزب اختلاف کی جماعتوں سے حتمی مشاورت کرنے کا بھی فیصلہ کرتے ہوئے کہا کہ جو جماعتیں ڈی چوک پر دھرنے کے مخالف ہیں وہ کھل کر قوم کو آگاہ کر دیں۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آزادی مارچ جمعیت علمائے اسلام (ف) کا ہے جو ساتھ دے گا ٹھیک ورنہ ہم اپنا لائحہ عمل منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ واضح رہے کہ جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے آئندہ کا لائحہ عمل طے کرنے کے لیے آج اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس طلب کر رکھی ہے جبکہ مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف اور پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری مصروفیات کے باعث شریک نہیں ہو سکیں گے۔ بلاول بھٹو زرداری بہاولپور میں جلسے کے باعث جبکہ پارٹی کے سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کی وجہ سے اے پی سی میں شریک نہیں ہو سکیں گے۔