03:05 pm
فضل الرحمن نےنواز شریف اور آصف زرداری کی گرفتاری کو ناجائز عمل قرار دیدیا

فضل الرحمن نےنواز شریف اور آصف زرداری کی گرفتاری کو ناجائز عمل قرار دیدیا

03:05 pm

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ نااہلوں کو حکومت دے دی گئی تو ملک کیسے چلے گا؟، حکمرانوں کی درجنوں درخواستیں مسترد ہونے کے باوجود الیکشن کمیشن فیصلہ نہیں کرپارہا، دوسری جانب سینئر سیاستدانوں کو گرفتار کیا جاتا ہے، سیاسی قیادت کی گرفتاری ناجائز عمل ہے۔جمعیت علمائے اسلام (ف) کے زیر اہتمام آزادی مارچ کو 12واں دن ہے، 27 اکتوبر کو کراچی سے نکلنے والا قافلہ یکم نومبر کو اسلام آباد پہنچا تھا، جے یو آئی ف کے احتجاج کو مسلم لیگ نواز، پاکستان پیپلزپارٹی،
عوامی نیشنل پارٹی، پختونخوا ملی عوامی پارٹی، نیشنل پارٹی، جمعیت علمائے پاکستان (نورانی) سمیت 9 جماعتوں کی حمایت حاصل ہے۔اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے سابق صدر آصف علی زرداری اور نواز شریف کی صحت کیلئے دعا کرتے ہوئے کہا کہ یہ اس وقت ملک کی ٹاپ لیڈر شپ اور انتہائی قابل احترام ہیں، حکومت کے ایوانوں سے ان کے ساتھ روا رکھا گیا رویہ انتہائی گرا ہوا کردار ہے۔ان کا کہنا ہے کہ جو ملک چلانے کے سلیقے جانتا ہے انہیں جیل میں ڈال دیا گیا، جو نااہل ہیں انہیں مسلط کردیا گیا، نااہلوں کو حکومت عطا کردی گئی تو ملک کیسے چلے گا؟۔سربراہ جے یو آئی (ف) نے موجودہ حکمرانوں کو پتھر دل قرار دیتے ہو کہا کہ قابض افراد سیاسی قیادت پر جبر روا رکھے ہوئے ہیں، 70 سال سے زائد عمر کے سیاستدان استقامت کا مظاہرہ کررہے ہیں، بنیادی طور پر سیاسی قائدین کی گرفتاری ناجائز عمل ہے۔ان کا کہنا تھا کہ حکمران خود اتنے بڑے چور اور کرپٹ ہیں کہ 60 درخواستیں مختلف عدالتوں میں دائر کرچکے، ان کی درجنوں درخواستیں مسترد ہوچکیں، اس کے باوجود الیکشن کمیشن ان کیخلاف فیصلہ نہیں کرپا رہا، دوسری جانب سینئر سیاستدانوں کو گرفتار کیا جاتا ہے۔

تازہ ترین خبریں