06:47 am
بلوچستان اسمبلی کو غیر جانبدار رہ کر چلا رہا ہوں،اپوزیشن اور حکومت ..

بلوچستان اسمبلی کو غیر جانبدار رہ کر چلا رہا ہوں،اپوزیشن اور حکومت ..

06:47 am

کوئٹہ : ڈپٹی سپیکر بلوچستان اسمبلی سردار بابر خان موسی خیل نے کہا ہے کہ بلوچستان اسمبلی کو قواعد و ضوابط کے مطابق غیر جانبدار رہ کر چلا رہا ہوں،اپوزیشن اور حکومت دونوں کے اراکین میرے لیے برابر ہیں،پاکستان تحریک انصاف کے سینئیر رہنما جہانگیر خان ترین کے فیصلے کے مطابق ڈپٹی سپیکر کا عہدہ قبول کیا۔
 
ان خیالات کا اظہار انھوں نے جمعہ کو اپنے چیمبر میں صحافیوں کے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، سردار بابر خان موسی خیل نے کہا کہ میرے دروازے شیرانی اور موسی خیل کے عوام کے لیے ہمیشہ کھلے ہیں،مجھے عوام کی خدمت کا فریضہ اپنے والد سے وراثت میں ملا ہے میرے والد مرحوم نے بطور رکن بلوچستان اسمبلی اور ضلعی ناظم کے طور پر عوام کی رہنمائی اور خدمت کا فریضہ احسن انداز میں سرانجام دیا جس کا اعتراف مخالفین بھی کرتے ہیں، انھوں نے کہا کہ عوام نے مجھے تبدیلی اور اپنے مسائل کے حل کے لیے ووٹ دیئے ہیں ،اس لیے عوام کی خواہشات و امنگوں کے مطابق کارکردگی نہ دکھانے والے آفیسران کو تبدیل کیا جائے گا اور اس ضمن میں کوئی شفارش یا دباؤ ہرگز قبول نہیں کیا جائے گا، سردار بابر خان موسی خیل نے کہا کہ ایوان کو بطور ڈپٹی سپیکر ہمیشہ غیر جانبدار ہو کر چلایا،میری کوشش ہے کہ بلوچستان کی حسین روایات اور رسم ورواج کے مطابق ایوان کی کارروائی احسن انداز میں چلے جس پر حکومتی اور اپوزیشن جماعتوں کے اراکین اسمبلی کے تعاون کا مشکور ہوں، انھوں نے کہا کہ موسی خیل اور شیرانی کے اضلاع کو ایک حلقے میں ضم کرنے کے فیصلے کو انصاف پر مبنی نہیں سمجھتے ہیں کیونکہ دونوں اضلاع کا شمار پاکستان کے پسماندہ ترین اضلاع میں ہوتا ہے،ڈپٹی سپیکر بلوچستان اسمبلی سردار بابر خان موسی خیل نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے منشور کے مطابق عوام سے الیکشن میں کیے گئے وعدوں کی تکمیل کے لیے میرے دروازے مخالفین کے لیے بھی کھلے ہیں اور تعلیم صحت ابنوشی سمیت تمام محکموں میں ٹرانسفر پوسٹنگ کا عمل میرٹ پر کیا جا رہا ہے تاکہ ماضی کے زیادتیوں کا ازالہ کر کے عوام کو ریلیف فراہم کیا جا سکیں۔

تازہ ترین خبریں