05:20 pm
مفتی کفایت اللہ جے یو آئی کے’’ گلو بٹ بن ‘‘گئے، روڈ بلاک کرنے پر شہری کیساتھ کیا سلوک کرڈالا، ویڈیو وائر ل

مفتی کفایت اللہ جے یو آئی کے’’ گلو بٹ بن ‘‘گئے، روڈ بلاک کرنے پر شہری کیساتھ کیا سلوک کرڈالا، ویڈیو وائر ل

05:20 pm

لاہور (نیوز ڈیسک) مفتی کفایت اللہ جے یو آئی کے 'گلو بٹ' بن گئے۔ مفتی کفایت اللہ نے شہری کی جانب سے روڈ بلاک کرنے سے روکنے پر دھکا دے کر پیچھے کر دیا۔تفصیلات کے مطابق سانحہ ماڈل ٹاؤن میں گلو بٹ کا کردار سامنے آیا تھا جس نے پنجاب پولیس کے ساتھ مل کر ڈنڈوں سے املاک کو نقصان پہنچایا،گاڑیوں کے شیشےتوڑے اور توڑ پھوڑ کی۔آج کل جمعیت علمائے اسلام ف بھی آزادی مارچ کی وجہ سے خبروں کی زینت بنی ہوئی ہے۔لیکن اب ایک گلو بٹ جے یو آئی ایف میں بھی سامنے آ گئے ہیں۔سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں جمعیت علمائے اسلام ف کے رہنما مفتی کفایت اللہ ایک شہری کو روڈ بلاک کرنے سے روکنے
پر دھکا دے رہے ہیں۔سوشل میڈیا پر مفتی کفایت اللہ کو ن لیگ کے گلو بٹ سے تشبیہ دی جا رہی ہے۔۔خیال رہے کہ جے یو آئی ایف نے پلان بی کے تحت ملک بھر میں روڈ بلاک کرنے کا اعلان کر رکھا ہے جب کہ دوسری جانب ذرائع نے بتایا کہ مولانا فضل الرحمان کے پُر امن رہنے کے اعلان کے باوجود بھی پلان بی کے پر تشدد ہونے کا خدشہ ہے ۔ پلان بی کو پر تشدد بنانے کے لیے فضل الرحمان کی جماعت کے قافلوں میں کئی ایسے افراد کے موجود ہونے کا بھی اہم اداروں کو ثبوت مل چکا ہے ۔فضل الرحمان کو نہ صرف پلان بی میں ن لیگی شخصیت کی مکمل مشاورت اور حمایت حاصل بلکہ پلان بی میں بھی ان کی طرف سے بھاری فنڈنگ کی جا رہی ہے ۔ پلان اے میں کامیابی نہ ملنے پر پلان بی شروع کرنے کا اصل مقصد یہ بھی ہے کہ کسی طرح ملک کے اندر بھرپور طریقہ سے افرا تفری اور تصادم کی ایسی صورتحال پیدا ہو کہ اگر کوئی لاشیں گریں تو پھر ان پر باقاعدہ سیاست کر کے حکومت اور اداروں کے خلاف بھرپور محاذ آرائی شروع کروائی جائے اور پھر اس تحریک کو کوئی اور رنگ دیا جائے ۔ایک ذرائع نے تو یہ بھی کہہ دیا کہ پیغام رساں کے ذریعے بھی دو روز سے لیگی شخصیت سے باقاعدہ رابطے جاری تھے جن کے دوران پلان بی کی حکمت عملی تیار کی گئی ۔ مولانا فضل الرحمان کے پلان بی کو باقاعدہ پر تشدد بنانے کے لیے مولانا کے جلوسوں میں ہی بڑی تعداد میں لوگ شامل ہیں جس کا اہم رہنماؤں کو علم بھی ہے اور صرف اپنے آپ کو محفوظ اور درست ثابت کرنے کے لیے پُر امن رہنے کا اعلان کیا گیا جبکہ کارکنوں کو ہدایات کچھ اور مل چکی ہیں۔ مولانا فضل الرحمان کے پلان بی کو بھارتی اور افغان میڈیا کی طرف سے بھرپور کوریج ملنے اور پراپیگیٹ کرنے پر بھی اہم ادارے اس معاملے کو دیکھ رہے ہیں کہ مولانا کے پلان بی میں غیر ملکی قوتوں اور میڈیا کو اتنی دلچسپی کیوں ہے ۔

تازہ ترین خبریں