06:54 am
 حکومت استعفی دے دیتی تواحتجاج ملک بھرتک نہ پھیلتا،مولانافضل الرحمان

حکومت استعفی دے دیتی تواحتجاج ملک بھرتک نہ پھیلتا،مولانافضل الرحمان

06:54 am

اسلام آباد(نیوز ڈیسک )جمعیت علمائے اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ حکومت استعفی دے دیتی تواحتجاج ملک بھرتک نہ پھیلتا،عمران خان نے ایسی صورتحال پیدا کردی ہے کہ کوئی اب وزیراعظم بننے کو تیار نہیں۔اسلام آباد میں جے یو آئی ف کے سربراہ مولانافضل الرحمان نے چوہدری برادران کے ہمراہ میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سینیٹرطلحہ محمود نے چائے کی دعوت پربلایا،
اسلام آباد دھرنے کےدوران چوہدری برادران آتےرہے،ہم اپنےمطالبات پر قائم ہیں،حکومت آگے بڑھنےکے لیے تیارنہیں ہے۔مولانافضل الرحمان نے کہا کہ حکومت نے استعفے پرابھی تک رضامندی ظاہرنہیں کی،چوہدری صاحبان ملاقات کے لیے تشریف لائے،چوہدری صاحبان کا شکریہ ادا کرتا ہوں،چوہدری صاحبان نے آزادی مارچ کوسراہا،دھرنے نے سیاست میں نیا رجحان متعارف کرایا،شرکا ءنے امن و امان کو ترجیح پر رکھا۔سربراہ جے یو آئی ف نے مزید کہا کہ کہا کہ تاریخ کااتنابڑا آزادی مارچ پرامن اندازمیں ختم ہوا،پرامن احتجاج کےذریعےسیاست میں نئی روایت کی بنیادڈالی،ہم نےقانون ،آئین اورعدالتی حدود کاہمیشہ خیال رکھاہے،خواہش ہے کہ پاکستان جمہوری انداز میں آگے بڑھے۔نواز شریف کی صحت کے حوالے سے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ انڈیمنٹی کا مطالبہ کم ظرفی ہے،نواز شریف کی صحت انسانی مسئلہ ہے،نوازشریف کوعلاج کے لیے باہرجانے دیاجائے۔سربراہ جے یوآئی ف کا کہنا تھا کہ آزادی مارچ ابھی ختم نہیں ہوا،ملک بھر میں دھرنے شروع ہوگئے ہیں ،اجتماع ملک بھرتک پھیل چکا ہے ،دھرنے کے شرکاءکو پُرامن رہنے اورعوام کا خیال رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے،انتظامیہ بھی احتیاط کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑے،دھرنےکے شرکا ءنے ٹریفک اوربیماروں کا خیال کرنا ہے،حکومت استعفی دے دیتی تواحتجاج ملک بھرتک نہ پھیلتا۔مہنگائی کے حوالے سے مولانافضل الرحمان کا کہنا تھا کہ جہاں ٹماٹر300روپےکلو ہو،وہاں غریب آدمی کیاکرےگا،مہنگائی سے عوام کا جینا مشکل ہوگیا ہے،لگتاہےکہ2،3ماہ بعد کوئی بھی ملک کوسنبھال نہیں سکے گا۔