09:31 pm
نوازشریف   واپس نہ آئے تو عدالت کے مجرم ہونگے،شہزاد اکبر

نوازشریف واپس نہ آئے تو عدالت کے مجرم ہونگے،شہزاد اکبر

09:31 pm

اسلام آباد( آن لائن)مشیر احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ سزایافتہ مجرم کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالاجا سکتا ،خصوصی حالات میں ایک بار ای سی ایل سے نام خارج کیا جا سکتا ہے ،نوازشریف کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر ایک بار باہر جانے کی اجازت دی ، اب واپس نہ آئے تو عدالت کے مجرم ہونگے۔ مشیر احتساب شہزاد اکبر نے اٹارنی جنرل انور منصور کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے نوازشریف کی صحت سے متعلق سفارشات پیش کیں،سزا یافتہ مجرم کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالاجاسکتا
،نوازشریف کا نام انسانی ہمدردی کی بنیادپرایک بار ای سی ایل سے نکالنے کی منظوری دی گئی،مشیر احتساب نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کی کاپی ابھی تک موصول نہیں ہوئی،لاہور ہائیکورٹ کا مختصر فیصلہ موصول ہوا ہے،نواز شریف کی صحت سے متعلق میڈیکل بورڈ نے جو کچھ بتایا و ہ سب کے سامنے ہے،کابینہ نے انسانی ہمدردی کی بنیادوں پرنواز شریف کو ریلیف دیا۔شہزاداکبر نے کہا کہ ماضی کوسامنے رکھتے ہوئے انڈیمنٹی کی شرط رکھنا ضروری تھا،عدالت نے نواز شریف کو 4 ہفتوں کاوقت دیاکہ وہ علاج کرائیں اورواپس آئیں،سپریم کورٹ نے قرار دیا کہ نواز شریف صادق اور امین نہیں ہیں،لاہورہائیکورٹ نے کابینہ کا4ہفتوں اورایک باربیرون ملک جانے کافیصلہ برقراررکھا۔مشیر احتسااب شہزاداکبر نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ نے نوازشریف اور شہبازشریف سے بیان حلفی لیا،نواز شریف کے سمدھی اور دو بیٹے مفرور ہیں،لاہور ہائیکورٹ نے انڈیمنٹی بانڈ کی جگہ بیان حلفی رکھ دیا،ہم نے نواز شریف کے ماضی کو سامنے رکھتے ہوئے انڈیمنٹی بانڈ کافیصلہ کیاتھا،لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی کابینہ کے صرف ایک فیصلے کو معطل کیا۔انہوں نے کہا کہ شہبازشریف سے انڈیمنٹی بانڈ ریکوری کیلئے نہیں ،سیکیورٹی کیلئے مانگا تھا، اب اگر نوازشریف واپس نہیں آتے تو وہ عدالتوں کے بھی مجرم ہوں گے،علاج ختم ہوتے ہی نوازشریف وطن واپس آئیں گے،نوازشریف صاحب سے کوئی چیز نہیں مانگی گئی تھی ، حکومت کوجوشیورٹی چاہیے تھی وہ بیان حلفی کی شکل میں مل گیا،ماضی میں انھوں نے کتنی بار وعدہ خلافی کی ہمیں یاد ہے۔اٹارنی جنرل آف پاکستان انور منصور نے کہا کہ نوازشریف کومقررہ مدت کیلئے علاج کی اجازت دی ہے،عدالت نے بھی یقین نہیں کیا اور نوازشریف شہبازشریف سے بیان حلفی لے لیا، اگر نوازشریف واپس نہیں آتے تو عدالتوں کے بھی مجرم ہوں گے،دونوں بھائیوں نے عدالتوں میں خود کو گروی رکھ دیا ہے۔عدالتی فیصلے میں بہت اہم باتیں ہیں،عدالت کو یقین نہیں تھا شہبازشریف صحیح رپورٹ بھیجیں گے یا نہیں،انہوںنے کہا کہ کابینہ کا فیصلہ تھا انسانی ہمدردی کی بنیاد پرایک بار اجازت دیں گے،عدالت نے نوازشریف کومقررہ مدت کیلئے علاج کی اجازت دی ہے،عدالت نے بھی یقین نہیں کیا اور نوازشریف شہبازشریف سے بیان حلفی لے لیا۔انہوں نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ نے نوازشریف کیلئے شرائط رکھی ہیں،نوازشریف کی واپسی کے گارنٹر شہبازشریف ہیں،شہبازشریف نے گارنٹی دی ہے کہ وہ اس کے پابند ہیں،اٹارنی جنرل نے کہا کہ ان کا ماضی ٹھیک نہیں اس کیلیے عدالت نے بیان حلفی لیا،لاہور ہائیکورٹ نے واپسی کی تحریری یقین دہانی لی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس میں شک نہیں کہ نوازشریف کی حالت تشویشناک ہے،کابینہ نے تسلیم کیا کہ نوازشریف کی حالت تشویش ہے ،عدالت نے واضح کردیا کہ کابینہ کا فیصلہ ماننے کے بعد ہی بیرون ملک جاسکتے ہیں،انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے میں ہے کہ ہائی کمیشن سے میڈیکل رپورٹ کی تصدیق ہوگی، عدالت کو یقین تھا کہ یہ درست رپورٹ نہیں بھیجیں گے،عدالت نے وفاقی کابینہ کی 3میں سے 2شرائط مانیں۔انہوں نے کہا کہ اگر نوازشریف واپس نہیں آتے تو عدالتوں کے بھی مجرم ہوں گے،دونوں بھائیوں نے عدالتوں میں خود کو گروی رکھ دیا ہے،عدالت نے تسلیم کیا کہ کابینہ نے غلط فیصلہ نہیں کیا،نوازشریف واپس نہ آئے تو توہین عدالت کا قانون لاگو ہوگا،اب پتہ چل جائے گا کہ یہ صادق اور امین ہیں کہ نہیں۔

تازہ ترین خبریں

یوسف رضا گیلانی کی ایم کیو ایم وفد سے ملاقات، سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

یوسف رضا گیلانی کی ایم کیو ایم وفد سے ملاقات، سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

پشاوربی آرٹی میں مہندی ،نوجوانوں کاڈھول کی تھاپ پررقص،بھنگڑااورہلہ گلہ

پشاوربی آرٹی میں مہندی ،نوجوانوں کاڈھول کی تھاپ پررقص،بھنگڑااورہلہ گلہ

قومی اسمبلی اجلاس، وزیراعظم کی حمایت میں پہلا ووٹ عامر لیاقت نے دیا

قومی اسمبلی اجلاس، وزیراعظم کی حمایت میں پہلا ووٹ عامر لیاقت نے دیا

عمران خان کی کامیابی نے 92ء کے ورلڈکپ کی یاد تازہ کردی‘: روحیل حیات

عمران خان کی کامیابی نے 92ء کے ورلڈکپ کی یاد تازہ کردی‘: روحیل حیات

عمران نیازی اپنے غنڈوں کو لگام ڈالیںورنہ۔۔۔ن لیگی رہنمائوں کیساتھ پیش آئے واقعہ کے بعد مریم نواز پھٹ پڑیں

عمران نیازی اپنے غنڈوں کو لگام ڈالیںورنہ۔۔۔ن لیگی رہنمائوں کیساتھ پیش آئے واقعہ کے بعد مریم نواز پھٹ پڑیں

بلاول بھٹو زرداری استقبال کیلئے انتظار کرتے رہ گئے مریم نواز دوسرے گیٹ سے آگئیں جب بلاول کومعلوم ہواتوانہوں نے کیاکیا

بلاول بھٹو زرداری استقبال کیلئے انتظار کرتے رہ گئے مریم نواز دوسرے گیٹ سے آگئیں جب بلاول کومعلوم ہواتوانہوں نے کیاکیا

سامنے آؤ، ایمبولینس میں نہ بھیجا تو میرا نام شاہد خاقان نہیں‘ پی ٹی آئی کارکنان کو چیلنج

سامنے آؤ، ایمبولینس میں نہ بھیجا تو میرا نام شاہد خاقان نہیں‘ پی ٹی آئی کارکنان کو چیلنج

لوگوں کا ضمیر عمران خان کے ساتھ نہیں، انشاءاللّہ آپ کو بہت بڑی خبر ملے گی۔ن لیگی رہنماء نے بڑادعویٰ کردیا

لوگوں کا ضمیر عمران خان کے ساتھ نہیں، انشاءاللّہ آپ کو بہت بڑی خبر ملے گی۔ن لیگی رہنماء نے بڑادعویٰ کردیا

خبردار ! حکمران شرافت کا دامن نہ چھوڑیں ورنہ اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے ، مولانا فضل الرحمٰن

خبردار ! حکمران شرافت کا دامن نہ چھوڑیں ورنہ اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے ، مولانا فضل الرحمٰن

لیگی رہنماؤں اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں جھگڑا کس بات پر شروع ہوا ؟ اصل وجہ سامنے آگئی

لیگی رہنماؤں اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں جھگڑا کس بات پر شروع ہوا ؟ اصل وجہ سامنے آگئی

’’پی ٹی آئی کے غنڈوں کا مقابلہ کرنے پرمجھے اپنے شیروں پر فخر ہے‘‘مریم نواز

’’پی ٹی آئی کے غنڈوں کا مقابلہ کرنے پرمجھے اپنے شیروں پر فخر ہے‘‘مریم نواز

وزیر اعظم اعتماد کا ووٹ لینے میں کامیاب۔۔۔ مریم نواز نے ایسی بات کہہ دی کہ کھلاڑی بھی حیران رہ گئے

وزیر اعظم اعتماد کا ووٹ لینے میں کامیاب۔۔۔ مریم نواز نے ایسی بات کہہ دی کہ کھلاڑی بھی حیران رہ گئے

’میں ما لشیا قسم کا وزیر نہیں ‘ وزیراعظم کو اعتماد کا ووٹ ملنے کے بعد شیخ رشید کا قومی اسمبلی میں خطاب

’میں ما لشیا قسم کا وزیر نہیں ‘ وزیراعظم کو اعتماد کا ووٹ ملنے کے بعد شیخ رشید کا قومی اسمبلی میں خطاب

جمہوریت حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مقابلے کو کہتے ہیں،عمران خان اکیلے ہی دوڑ کر اول آئے، راجہ پرویز اشرف کا ردعمل

جمہوریت حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مقابلے کو کہتے ہیں،عمران خان اکیلے ہی دوڑ کر اول آئے، راجہ پرویز اشرف کا ردعمل