02:24 pm
قانون سازی ایسے ہی نہیں ہوجائے گی، ن لیگ نے آرمی چیف کے حوالے سے قانون سازی کا بھرپور فائدہ اٹھانے کافیصلہ

قانون سازی ایسے ہی نہیں ہوجائے گی، ن لیگ نے آرمی چیف کے حوالے سے قانون سازی کا بھرپور فائدہ اٹھانے کافیصلہ

02:24 pm

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) ن لیگ نے آرمی چیف کے حوالے سے قانون سازی کا بھرپور فائدہ اٹھانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق ن لیگ اس موقع سے اپنے لیے بارگین بھی کرے گی۔حکومت سے شرائط طے کرنے کا بھی امکان ظاہر کیا جا رہا ہے
۔شہباز شریف نے اس حوالے مختصر عدالتی فیصلے کی کاپی بھی لندن منگوا لی ہے۔شہباز شریف اس سلسے میں نواز شریف سے بھی مشاورت کریں گے۔ن لیگ کو تفصیلی فیصلہ آنے کا انتظار ہے۔شہاز شریف تفصیلی فیصلہ آنے کے بعد باقی قیادت سے بھی مشاورت کریں گے۔شہباز شریف ویڈیو لنک کے ذریعے سے پاکستان میں موجود قیادت سے بھی مشورہ کریں گے۔جب کہ دوسری جانب وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ آئین میں تبدیلی کیلئے 2 تہائی اکثریت چاہیے ہوگی۔بتایا گیا کہ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کی زیرصدارت پارلیمانی پارٹی اور اتحادی ارکان کا اجلاس ہوا۔اجلاس میں شاہ محمود قریشی نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق آگاہ کیا۔ وفاقی وزیر پارلیمانی امور نے ارکان کے اعزاز میں عشائیہ دیا۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آرمی چیف کی تعیناتی بطور چیف ایگزیکٹو وزیراعظم کا اختیار ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے سے بے یقینی کی فضاء ختم ہوگئی۔آج سپریم کورٹ کے فیصلے کا آنا بروقت اور مناسب اقدام ہے۔پاکستان کو بے یقینی کی صورتحال میں رکھنا ملکی مفاد میں نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ آرمی چیف کی تعیناتی یا توسیع سے متعلق قانون بڑا واضح ہے۔ یہ ایک طے شدہ معاملہ ہے پارلیمنٹ اس پر اپنی رائے دے چکی ہے۔وہ لوگ جنہوں نے آئین کو مرتب کیا وہ اپنی رائے دے چکے ہیں۔ مایہ ناز وکیل اعتزاز احسن اپنی رائے کا اظہارکرچکے ہیں،انہوں نے کہا کہ عدالت میں عدلیہ کے احترام کو ملحوظ خاطر رکھ کرعدالت کی معاونت کی۔ عدالتی احکامات کی روشنی میں قانون سازی کریں گے۔ اب یہ مسئلہ حل ہوچکا ہے اس میں کوئی ابہام نہیں ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے کا احترام کرتے ہیں، آئین میں تبدیلی کیلئے 2 تہائی اکثریت کی ضرورت ہے۔

تازہ ترین خبریں