05:24 pm
اب بینکوں سے 50 ہزار سے زائد کیش نکلوانے والے بھی جواب دینگے

اب بینکوں سے 50 ہزار سے زائد کیش نکلوانے والے بھی جواب دینگے

05:24 pm

کراچی(ویب ڈیسک) ایف بی آرنے نان فائلرز کے گھیرا مزید تنگ کر دیا۔ بینکوں میں بھاری رقوم کی لین دین کرنے والوں کا ڈیٹا اکھٹا کر نا شروع کر دیا گیا۔ یومیہ 50 ہزار سے زیادہ کیش نکلوانے والے بھی جواب دیں گے۔ذرائع کے مطابق ایف بی آر کا نان فائلرز کے خلاف ایکشن جاری ہے، بینکوں سے بھاری رقوم منتقل کرنے والوں کی تفصیلات جمع کر لی گئی، نوٹس جاری کر کے پوچھ گچھ ہو گی۔ ذرائع کے مطابق تمام
بینک معلومات فراہم کرنے کیلئے تیار ہیں، یومیہ 50 ہزار روپے سے زیادہ کیش نکلوانےوالوں اور ماہانہ 2 لاکھ روپے یا اس سے زیادہ کا کریڈٹ کارڈ بل ادا کرنے والوں کا ڈیٹا فراہم کیا جائے گا۔اکاؤنٹ سے ماہانہ 10 لاکھ روپے یا اس سے زائد کی ٹیکس کٹوتی کے حامل افراد کی معلومات بھی دی جائیں گی، کمرشل بینک ایک ماہ میں 1 کروڑ روپے یا اس سے زیادہ رقوم جمع کرانے والوں کے کوائف بھی ایف بی آر کو فراہم کریں گے۔اگر یہ اکاؤنٹس ہولڈ زنان فائلرز ہوئے انہیں بتانا پڑے گا کہ یہ سرمایہ کہاں سے آیا۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سینئر تجزیہ کار حسن نثار نے اپوزیشن کو قریب المرگ قراردے دیا۔ انہوں نے کہا کہ خدامعاف کرے، اللہ ہر کسی کو اپنی پناہ میں رکھے، یہ قریب المرگ ہیں،اپوزیشن مایوس ہوکرحکومت کو نااہل اور نالائق کہتی ہے، کسی نے ابھی تک پی ٹی آئی کا کوئی مالی اسکینڈل نہیں ہے، ان کے کرپشن کے ہفتہ وار پروگرام چلتے تھے۔یہ پی ٹی آئی کو کرپٹ کہہ نہیں سکتے، بس صرف پھر نالائق کہہ سکتے ہیں۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مردہ معیشت میں جان پڑ گئی ہے، کیا یہ حکومت کی نالائقی ہے؟ اسی طرح ن لیگ اور پیپلزپارٹی کی اجارہ داری توڑنا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ آپ بھٹو کی کابینہ کو دیکھ لیں، ڈاکٹرمبشر، انجینئرتھے، کوئی تجربہ نہیں تھا، مولانا کوثرنیازی کا کوئی تجربہ نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ گورننس ایک اور تجربہ ہے، موجودہ حکومت بونگیاں ضرورمار رہی ہے۔آسانی سے ٹھیک کرنے والی چیزیں بھی ٹھیک نہیں ہورہیں۔ یہ نالائق کہتے ہیں یہ تو پاکستان کی معیشت کو مرگ بستر پرڈال گئے تھے۔ ان کی جائیدادیں اربو ں کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے اپنے گھر کے باہر بھی نام کی پلیٹ لگانا چھچھورا پن لگتا ہے۔