04:34 pm
تبدیلی سرکارکی پالیسیوں پراپنے بھی خاموش نہ رہ سکے، کتنے ارکان نے آواز بلند کر دی

تبدیلی سرکارکی پالیسیوں پراپنے بھی خاموش نہ رہ سکے، کتنے ارکان نے آواز بلند کر دی

04:34 pm

اسلام آباد(ویب ڈیسک )نجی ٹی وی پروگرام میں پی ٹی آئی کے 4ارکان اسمبلی نے شرکت کی 3نے تنقید کی جبکہ ایک نے تعریف کی ،تحریک انصاف کے ارکان اسمبلی نورعالم خان نے مشال خان کے والد پرایف آئی آرکی مذمت کرتے ہیں ،اسمبلی میں حکومت اوراپوزیشن کی اگلی تین بنچوں پربیٹھے لوگوں نے ملک کوتباہ کیاہے۔بعض وزراءعمران خان کوایم این ایز کی غلط شکایتیں لگاتے ہیں کچھ ارکان
اسمبلی کوفنڈز ملے ہیں مگرمیرے حلقے میں پرویز خٹک کی شروع کی گئی ترقیاتی اسکیمیں بھی ختم کردی گئی ہیں۔پارٹی میں رہتے ہوئے عوام کے لیے آواز اٹھانا میرا جمہوری حق ہے، تمام پارٹی لیڈرز کو تنقید برائے اصلاح برداشت کرنا پڑے گی، کوئی بھی پارٹی ہو قیادت تنقید برداشت نہیں کرتی ہے۔ وہ پروگرام کے میزبان حامد میر سے گفتگو کررہے تھے۔ پروگرام میں تحریک انصاف کے دیگر ارکان اسمبلی عطاء اللّہ، راجا خرم شہزاد نواز اور نیاز احمد جھکڑ بھی شریک تھے۔راجا خرم شہزاد نواز نے کہا کہ جنوبی پنجاب تو دور ہے اسلام آباد میں کرپشن ہورہی ہے، عوام کے مسائل حل نہیں ہوں گے تو وہ احتجاج کرنے پر مجبور ہوں گے۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سینئر صحافی رانا عظیم کا کہنا ہے کہ میں نے پہلے ہی کہا تھا کہ بہت جلد پنجاب میں بڑی تبدیلیاں ہوں گی۔فیاض الحسن چوہان کوصوبائی وزیر اطلاعات بنانے کے بعد جلد ہی پنجاب میں ایک سینیئر وزیر بھی لایا جائے گا۔وزیراعظم عمران خان کے لاہور کے دورے کے دوران یہ چہ مگوئیاں ہوئیں کہ کسی سے قلمدان واپس نہیں لایا جائے گا۔ لیکن پنجاب میں تبدیلیوں کا فیصلہ عمران خان لاہور آنے سے قبل ہی کر چکے تھے۔یہاں پر ایک اور بڑی تبدیلی ہونی تھی لیکن جب اس تبدیلی کے لیے نام سامنے آیا جس کا تعلق جنوبی پنجاب سے تھا،ان کا بھائی وفاق میں بھی اہم ترین عہدے پر ہے لیکن جب اس نام پر تھوڑی تحقیقات کی گئیں تو معلوم ہوا کہ ان کا کاروبار 80 فیصد شریف خاندان سے وابستہ ہے

تازہ ترین خبریں