08:49 am
دعا منگی کے اہلخانہ نے واقعے کے وقت موجود لڑکے کو 'ہیرو' قرار دے دیا

دعا منگی کے اہلخانہ نے واقعے کے وقت موجود لڑکے کو 'ہیرو' قرار دے دیا

08:49 am

کراچی : کراچی میں اغوا ہونے والی لڑکی دعا منگی کے بہن کا مارننگ شو میں گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ دعا میری چھوٹی بہن ہے،اغوا کا واقعہ بہت افسوسناک ہے۔لڑکیوں کے اغوا کے واقعات ہم سب کے لئے خطرے کی گھنٹی ہے۔دعا کی بہن نے مزید کہا ہے کہ اس قسم کے واقعے کے بارے میں کبھی کچھ نہیں سوچا تھا۔ہمارا کوئی بھائی نہیں ہے،ہم 3 بہنیں ہیں۔
 
جب کہ دعا کے ماموں کا کہنا ہے کہ دعا اس ملک کی بچی ہے۔ریاست کو ماں ثابت کرنا ہو گا۔دعا کے اغواکار گرفتار نہ ہوئے تو مزید واقعات بھی ہو سکتے ہیں۔دعا کے ماموں نے واقعے کے وقت ساتھ موجود لڑکے حارث کو ہیرو قرار دے دیا اور کہا کہ وہ چار ملزمان سے لڑا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ملزمان ہمارے آس پاس کے لوگوں میں شامل نہیں۔ صدر ، وزیراعظم ، گورنر یا وزیراعلیٰ کی ہمدری نہیں چاہئیے۔ہمیں اپنی دعا کے لیے انصاف چاہیے۔جب کہ صوبائی وزیر سعید غنی کا کہنا ہے کہ ڈیفنس جیسے علاقے میں دعا کا اغوا تشویشناک ہے،بازیابی میں مکمل کامیابی تو نہیں ملی البتہ کچھ پیش رفت ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ بچی کو بازیاب کروا لیں گے۔ملزمان جلد پکڑے جائیں گے۔سیف سٹی پروجیکٹ کے باوجود جرائم کو نہیں روکا جا سکتا۔بڑے شہروں میں جرائم کا مکمل خاتمہ ممکن نہیں۔ جب کہ دوسری جانب گذشتہ روز دو دن قبل کراچی کے پوش علاقے ڈیفنس سے اغوا ہونے والی لڑکی اور اسکے ساتھ زخمی ہونے والے اس کے قریبی ساتھی کے حق میں عوام کی جانب سے شدید مظاہرہ کیا گیا ۔ مظاہرہ کرنے والے افراد کا یہ مطالبہ تھا کہ دعا منگی کو جلد از جلد بازیاب کرایا جائے اور مجرمان کو گرفتار کیا جائے اور انکو کیفر کردار تک پہنچایا جائے ۔اس حوالے سے سوشل میڈیا پر ایک بہت بڑی کمپین جاری ہے جس میں صارفین ،مجرمان کی گرفتاری کا مطالبہ کر رہے ہیں۔خیال رہے کہ اس واردات کے وقت دعا کی بڑی بہن بھی اسی ریسٹورنٹ پر اپنے دوست کے ساتھ موجود تھی۔ بہن کے مطابق دعا اور حارث بات چیت کرنے کے لیے اٹھ کر ٹہلنے لگے کہ گولی چلنے کی آوازآئی، بیانات سے یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ مغوی دعا منگی کئی ماہ سے وقفے وقفے سے دوستوں کے ساتھ ماسٹر چائے پرآکر بیٹھتی تھی تاہم گز شتہ چار پانچ دن سے وہ مسلسل اور طویل دورانیہ کے لیے بیٹھک کر رہی تھی۔

تازہ ترین خبریں