09:32 am
بھارتی صحافی کا پاکستان پر ایسا الزام کہ ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھارت کو کھلا چیلنچ کر دیا ، بھارتی صحافی نے مارے شرم کے کیا کام کر ڈالا

بھارتی صحافی کا پاکستان پر ایسا الزام کہ ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھارت کو کھلا چیلنچ کر دیا ، بھارتی صحافی نے مارے شرم کے کیا کام کر ڈالا

09:32 am

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک ) ڈی جی آئی ایس پی آر کا بھارت کو کھلا چیلنچ، انکا کہنا ہے کہ آج 4 جنوری کو 572 زائرین کرتار پورہ صاحب تشریف لائے۔ خود ہی چیک کریں یا کوئی بھی پاکستانی انٹری پوائنٹ پر ریکارڈ دیکھنے کے لئے آسکتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام دیتے ہوئے پاکستانی فوج کے سربراہ میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ میں چیلنج کرنے کو تیار ہوں۔ آج 4 جنوری کو 572 زائرین کرتار پورہ صاحب تشریف لائے
۔ خود ہی چیک کریں یا کوئی بھی پاکستانی انٹری پوائنٹ پر ریکارڈ دیکھنے کے لئے آسکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ کوئی اپنی ساکھ کھونے میں اور جھوٹ کر پھیلانے میں کتنا دور جا سکتا ہے؟ اتنا نہیں جتنا اس ٹویٹ میں لکھا گیا ہے۔ ساتھ ہی انھوں نے بھارتی صحافی کا ٹویٹ شیئر کیا جس میں لکھا تھا کہ بھارت نے پاکستان کو ایک لسٹ بھیجی تھی جس میں کرتاپور صاصب جانے کے لیے 738 زائرین کے نام شامل تھی جن میں سے 737 زائرین کو اجازت ملی لیکن پاکستان نے صرف 150 زائرین کو کرتارپورہ جانے کی اجازت دی۔ اسکا بات کا جواب ڈی جی آئی ایس پی آر نے دیا انکا کہنا ہے کہ پاکستان نے 572 زائرین کو کرتار پورہ جانے کی اجازت دی، کوئی بھی چاہے وہ چیک کر سکتا ہے ۔ ڈی جی آئی ایس پی آرکے جواب کے بعد بھارتی صحافی نے مارے شرم کے اپنا ٹویٹ ہی ڈیلیٹ کر دیا ۔ یاد رہے کہ اس سے قبل ٹوئٹر پر پیغام دیتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ بھارتی میڈیا پر نا صرف اندون ملک بلکہ بیرون ملک سے بھی سوالات اٹھائے جاتے ہیں۔ انکا کہنا ہے کہ کسی بھی بیانیے کو کسی کو کاپی کر کہ نہیں پھلایا جا سکتا۔ انھوں نے کہا کہ اس کے لیے سچائی، اخلاقیات اور ذہن کی ضرورت ہوتی ہے جو کہ بھارتی میڈیا میں موجود نہیں ہے۔ انھوں نے اپنے ٹویٹ کے ساتھ ایک پوسٹ شیئر کی جس میں ایک بھارتی صحافی ادتتیا راج کول نے اپنے ٹویٹ میں کہا تھا کہ امریکہ نے پاکستان کے لیے اپنی خصوصی ٹرینگ پھر سے جاری کر دی ہے۔ یاد رہے کہ پاکستان کے مسلح افواج کے نمائندے کے سامنے بھارتی پراپوگینڈے نے ہتھیار ڈال دیے تھے ۔ لیفٹینٹ جنرل(ر) راجیش پنت نے کہا تھا کہ پاکستان کی طرح تینوں مسلح افواج کاایک ادارہ بنایا جائے، جدید جنگی حکمت عملی میں آئی ایس پی آر کی طرح متفقہ بیانیے کی ضرورت ہے۔ اس ضمن میں بھارتی سائبر سکیورٹی کوآرڈینیٹر جاری کیا گیا تھا کہ بھارت میں آئی ایس پی آر کی طرز کا ادارہ قائم کیا جائے۔ بھارتی سائبر سیکورٹی چیف نے بھی تسلیم کر تے ہوئے کہا تھا کہ بیانیئے کی جنگ کیسے لڑنی ہی یہ ڈی جی آئی ایس پی آر سے سیکھنا پڑیگا۔ بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارت کی تینوں مسلح افواج کیلئے الگ الگ پبلسٹی ونگز ہیں، تینوں افواج کے پبلسٹی ونگ اپنے اپنے راگ الاپ رہے ہوتے ہیں، پاکستان کا ایک آئی ایس پی آر موثر انداز میں بیانیہ دے رہا ہے، لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ راجیش پنٹ نے کہا تھا کہ بھارتی فورسز بھی پاکستان کی طرح مشترکہ آئی ایس پی آر تشکیل دیکر بیانیہ پیش کرے۔