02:19 pm
نعیم بخاری نے اٹارنی جنرل بننے سے صاف انکار کر دیا

نعیم بخاری نے اٹارنی جنرل بننے سے صاف انکار کر دیا

02:19 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) اٹارنی جنرل کے استعفے کے بعد اہم سرکاری عہدہ خالی ہونےپر نئی بحرانی کیفیت پیدا ہو گئی ہے۔ پی ٹی آئی رہنما اور پاکستان کے ممتاز قانون دان نعیم بخاری نے بھی اٹارنی جنرل کے عہدے کی پیشکش مسترد کر دی ہے۔نجی ٹی وی چینل جیو نیوز نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ حکومت نے نعیم بخاری کو اٹارنی جنرل کے عہدے
کے پیشکش کی جسے انھوںنے قبول کرنےسے معذرت کر لی۔جس کے بعد اب معروف ماہر قانون بیرسٹرعلی ظفر کو اس اہم عہدے کی پیشکش کی گئی ہے تاہم انھوںنے سوچ بچار کےلئے کچھ وقت مانگ لیا ہے۔واضح رہے کہ اٹارنی جنرل انور مقصود نے آج اپنا استعفیٰ پیش کر دیا جس کی وجہ انھوںنے یہ بتائی کہ پاکستان بار کونسل ان سے استعفےکا مطالبہ کررہی تھی چنانچہ انھوںنے استعفیٰ دے دیا تاہم وزارت قانون نے بتایا ہے کہ انور مقصود نے خود استعفیٰ نہیں دیا بلکہ ان سے ان کے نامناسب رویے کے باعث استعفیٰ لیا گیا ہے۔