01:45 pm
آٹے کی قیمتوں میں زبردست کمی کردی گئی

آٹے کی قیمتوں میں زبردست کمی کردی گئی

01:45 pm

لاہور(نیوز ڈیسک ) آٹا چکی ایسوسی ایشن کی جانب سے شہریوں کو ریلیف دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق گندم کی قیمت میں کمی کے بعد آٹے کی نئی قیمت 63 روپے فی کلو ہو گی جس کے بعد ایک من آٹا2480 روپے میں فروخت ہو گا۔انتظامیہ کی جانب سے مزید بتایا گیا ہے کہ جن افراد کو ایک من آٹا 1375 روپے فی من ملے گا وہ مالکان فی کلو آٹا 40 روپے فی کلو بیچنے کے پابند ہوں گے۔یہ کمی گندم کی قیمت میں کمی کے بعد آئی ہے ، گندم کی قیمت فی من 2200 روپے سے 1700 روپے تک کر دی گئی ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ کچھ وقت سے آٹے اور چینی کی قیمتوں میں حیران کن اضافہ دیکھنے میں آیا ہے جس کے بعد عمران خان اور خصوصاََ
پنجاب حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا تھا۔کہا جا رہاتھا کہ اس بحران کے پیچھے ایک مافیہ کام کر رہا ہے اور وہ مافیہ وزیراعظم عمران خان کے اردگرد بیٹھے ہوتے ہیں۔آٹے کی بڑھتی ہوئی قیمت نے عوام کو اس قدت مجبور کر دیا تھا کہ اپوزیشن ہو یا عوام، عمران خان کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا تھا اور کہا جا رہا تھا کہ اگر عوام سے آٹا بھی چھین لیا جائے گا تو وہ کیا کریں گے۔جبکہ دوسری جانب حکومتی ارکان کی جانب سے کہا جا رہا تھا کہ آٹے کا کوئی بحران نہیں ہے اور نہ ہی قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے۔آٹے کی بحران پر پنجاب کی اتحادی جماعت مسلم لیگ ق بھی سرگرم ہوئی تھی جس کے بعد انہوں نے بھی اپنے تحفظات حکومت کے سامنے رکھتے ہوئے کہا تھا کہ ہم سے کسی بارے میں بھی مشورہ نہیں کیا جاتا۔اگر حکومت نے سب فیصلے خود ہی کرنے ہیں تو ہم اپنا اتحاد ختم کر دیں گے۔ لیکن اب عوام کو آٹے کی قیمتوں میں کمی لا کر ان کو ریلیف دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ گندم کی قیمت میں کمی کے بعد آٹے کی نئی قیمت 63 روپے فی کلو ہو گی جس کے بعد ایک من آٹا2480 روپے میں فروخت ہو گا۔انتظامیہ کی جانب سے مزید بتایا گیا ہے کہ جن افراد کو ایک من آٹا 1375 روپے فی من ملے گا وہ مالکان فی کلو آٹا 40 روپے فی کلو بیچنے کے پابند ہوں گے۔ یہ کمی گندم کی قیمت میں کمی کے بعد آئی ہے ، گندم کی قیمت فی من 2200 روپے سے 1700 روپے تک کر دی گئی ہے۔