02:27 pm
پنجاب حکومت کی تبدیلی کے مشن پر ن لیگ کو ہم خیال گروپ نے ہی بڑاجھٹکا دیدیا

پنجاب حکومت کی تبدیلی کے مشن پر ن لیگ کو ہم خیال گروپ نے ہی بڑاجھٹکا دیدیا

02:27 pm

لاہور(نیوز ڈیسک) پنجاب حکومت کو تبدیل کرنے کے مشن پر پاکستان مسلم لیگ ن کو بڑا دھچکا ملا ہے۔آزاد اراکین نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی حمایت جاری رکھنے کا فیصلہ کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے پاکستان تحریک انصاف کے 20 ناراض اراکین صوبائی اسمبلی نے اپنا الگ گروپ بنایا تھا۔پاکستان تحریک انصاف کے ناراض گروپ کے سینئیر رکن سردار شہاب کا کہنا تھا کہ ہم عثمان بزدار کی ٹیم نہیں بلکہ ہم عمران خان
کی ٹیم ہیں۔ناراض ارکان کی طرف سے کئی تحفظات کا ذکر کیا گیا۔جب کہ یہ بھی قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ اس گروپ کو ن لیگ کی حمایت حاصل ہے،اور یہ اراکین ن لیگ کے ساتھ رابطے میں ہیں تاہم آج وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے آزاد اراکین سے ملاقات کر کے ترقیاتی فنڈز فراہمی کی یقین دہانی کرا دی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کامیابی کی صورت میں ن لیگ کی جانب سے آزاد اراکان کو وزارت چھوڑنے کی بھی آفر کی گئی تھی لیکن حکومت نے بروقت رابطہ کر کے ن لیگ کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ہے۔اس سے قبل سینئیر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ پنجاب کی سیاست میں مسلم لیگ ق سب سے آگے ہے۔پی ٹی آئی پنجاب میں جو 20 ہم خیال لوگوں کا گروپ بنا تھا اس کی سرپرستی وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کر رہے تھے۔اس گروپ کا مقصد ہے کہ عثمان بزدار کو با اختیار بنایا جائے۔ اور اس کا مطالبہ ہے کہ عثمان بزدار کو اختیارات دئیے جائیں جوکہ بیوروکریسی کو دئیے گئے ہیں۔شاہد مسعود نے مزید کہا کہ عثمان بزدار صوبے میں آٹے کی قلت کا ذمہ دار بھی بیورو کریسی کو ٹھہرایا ہے۔بیوروکریسی کو عمران خان نے صوبے کے کنٹرول کے لیے رکھا ہے۔وزیراعظم نے آئی جی اور چیف سیکرٹری پنجاب کے فنڈ بند کر کے رپورٹ بھیجنے کا حکم دیا جس پر ایک گروپ خاموشی سے بنا ہو عثمان بزدار کو ان کاحق دلانے کے لیے کوشاں ہے۔