09:09 am
شہید کرنل مجیب الرحمٰن کے12سالہ بیٹے کی کمانڈنگ آفیسر سے معصومانہ درخواست

شہید کرنل مجیب الرحمٰن کے12سالہ بیٹے کی کمانڈنگ آفیسر سے معصومانہ درخواست

09:09 am

راولپنڈی (نیوز ڈیسک) شہید کرنل مجیب الرحمن کے بارہ سالہ بیٹے کے جملے نے ہر آنکھ کو اشکبار کر دیا ، بچے نے درخواست کی انکل میرے چھوٹے بہن بھائیوں کو مت بتانا کہ پاپا کو کیا ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز سیکیورٹی فورسز نے ڈیرہ اسماعیل خان میں دہشت گردی کی کوشش کو ناکام بنا یا۔
ڈی آئی خان میں دہشت گردی کی منصوبہ بندی سے متعلق خفیہ اطلاعات ملی تھیں۔خفیہ اطلاعات پر ٹانگ کے قریب کارروائی کی گئی۔ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کا گھیراؤ کیا تو دہشتگردوں نے فائرنگ کر دی۔سیکیورٹی فورسز کی جوابی کاروائی میں دو انتہائی مطلوب دہشت گرد مارے گئے۔ جبکہ دہشتگردوں کی فائرنگ سے کرنل مجیب الرحمان شہید ہو گئے۔ان کا تعلق استور کے علاقے بنجی سے تھا۔صحافی حیدر نقوی کے مطابق جس وقت کرنل مجیب کو شدید زخمی حالت میں سی ایم ایچ منتقل کیا جا رہا تھا اس وقت کرنل مجیب کے 12 سالہ بیٹے نے اپنے باپ سے لپٹ کر شکایت کی کہ یہ تو چیٹنگ ہے آپ نے کہا تھا کہ ہم دشمنوں کا مقابلہ کریں گے۔اس لرزہ خیر منظر کو دیکھ کر ہر شخص کی آنکھ اشکبا ر ہوگئی۔ بعدازاں کرنل مجیب کی تدفین کے موقع پر موجود کمانڈنگ آفیسر کو 12 سالہ معصوم بچے کے معصومانہ سوال نے پھر سے ہر آنکھ اشکبار کر دی ، 12 سالہ بچے نے کہا کہ انکل میرے چھوٹے بہن بھائیوں کو مت بتانا کہ میرے پاپا کو کیا ہوا ہے۔ واضح رہے کہ کرنل مجیب الرحمن ایک بہادر اور ناڈر آفسر تھے۔ جنہوں نے ہر موقع پر دشمنوں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ اور دہشتگردوں کیساتھ جنگ لڑتے ہوئے اپنی جان اپنے وطن پر قربان کر دی۔ یہ بات بھی قابل غور رہے کہ کرنل مجیب الرحمان کے تین بیٹے جبکہ ایک بیٹی ہے۔ سب سے بڑے بیٹے کی عمر 12 سال ہے ۔ جس کے معصومانہ سوال نے تدفین کے موقع پر موجود تمام فراد کو رولا کر رکھ دیا ۔