10:01 am
 ہائیڈروکسی کلوروکوئین کورونا کیخلاف موثر ترین دواء قرار

ہائیڈروکسی کلوروکوئین کورونا کیخلاف موثر ترین دواء قرار

10:01 am

لاہور(نیوز ڈیسک) دنیا کے نامور ڈاکٹروں نے ہائیڈروکسی کلوروکوئین کو کرونا کیخلاف موثر ترین دوا قرار دے دیا۔تفصیلات کے مطابق ایک سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ دنیا کے نامور ڈاکٹروں کی جانب سے ہائیڈروکسی کلوروکوئین کو کرونا کے خلاف موثر ترین دوا قرار دیا گیا ہے۔اس حوالے سے سروے میں 30 ممالک کے 6ہزار سے زائد ڈاکٹروں کی رائے لی گئی۔سروے میں 37 فیصد نے ہائیڈروکسی کلوروکوئین کو کورونا
کے لیے موثر ترین علاج قرار دے دیا۔ڈاکٹروں کو اس سلسلے میں 15 دوائیوں کی لسٹ فراہم کی گئی تھی۔امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے گذشتہ ہفتے ہی کورونا کے مریضوں کے علاج کے لیے ہائیڈروکسی کلوروکین کے استعمال کی اجازت دی۔سروے میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ 51 فیصد ڈاکٹر اینل جیسک اور 41 فیصد ازیتھر ومائی سن تجویز کرتے ہیں۔قبل ازیں بتایا گیا تھا کہ کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے لئے ہائیڈروکسی کلوروئین اور ایزیتھرو مائی سین دوائیاں فائدہ مند ثابت ہونے لگی ہیں،مریضوں کو ان ادویات کا پانچ دن کا کورس مکمل کرایا گیا، اب تک اٹھارہ مریض صحتیاب ہو چکے ہیں۔نجی ٹی وی کے مطابق اینٹی ملیریا کیلئے استعمال ہونے والی دو دوائیوں ہائیڈروکسی کلوروئین اور ایزیتھرو مائی سین کو کورونا وائرس کے مریضوں پر استعمال کرنے کے کامیاب نتائج سامنے آ رہے ہیں۔متاثرہ مریضوں کو ہائیڈروکسی کلوروئین پہلے روز دو گولیاں صبح اور دو شام دی گئیں جبکہ باقی چار دن ایک گولی صبح اور ایک شام دی جا رہی ہے۔کورونا ایڈوائزری گروپ کے کوچیئرپرسن اسد اسلم نے اس بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ گلے کی سوزش، بیکٹریا، جلد کے انفیکشن، آنکھ اور کان کے انفیکشن کے لئے استعمال ہونے والی ایزیتھرومائی سین ایک گولی صبح اور شام پانچ دن کا کورس مکمل کروایا جاتا ہے۔تمام سرکاری ہسپتالوں میں یہ ادویات استعمال کروا کر مریضوں کو صحت یاب کیا جارہا ہے۔ڈاکٹر اسد کا مزید کہنا تھا نجی معالج بھی یہ دو ادویات اپنے کورونا کے مریضوں کو استعمال کر سکتے ہیں۔ تاہم انہوں نے خبردار کیا کہ یہ دوا اپنے معالج کے مشورہ کے بغیر کھانے سے سائیڈ ایفیکٹ بھی کر سکتی ہے، اس لئے ڈاکٹر کی مشاورت کے بغیر اسے استعمال نہ کیا جائے۔پروفیسر اسد اسلم نے بتایا کہ پنجاب کے سرکاری ہسپتالوں میں کورونا کے مریضوں کو دو ادویات کا پانچ دن کا کورس مکمل کرایا گیا، اب تک اٹھارہ مریض صحت یاب ہو چکے ہیں۔ ان مریضوں میں میو ہسپتال کے 8، پی کے ایل آئی کے 4 اور پنجاب کے دیگر اضلاع سے مریض صحتیاب ہوئے۔