10:06 am
راشن کی تقسیم کے دوران کورونا پھیلا تو جرم تصور کیا جائے گا،مراد علی شاہ

راشن کی تقسیم کے دوران کورونا پھیلا تو جرم تصور کیا جائے گا،مراد علی شاہ

10:06 am

کراچی (نیوز ڈیسک ) راشن کی تقسیم سے کورونا وائرس پھیلا تو جرم تصور کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ مخیئر حضرات راشن کی تقسیم کے دوران احتیاطی تدابیر کو مد نظر رکھیں، اگر راشن کی تقسیم کے دوران بھی کورونا پیھلا تو جرم تصور کیا جائے گا۔ مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ایس او پیز بنا رہے ہیں ہر شخص کو اس ایس او پی پر عمل کرنا ہوگا۔لوگ اپنے بزرگوں اور بچوں کا خیال رکھیں، اور حفاظتی انتظامات کے زریعے ان کی زندگیاں محفوظ بنائیں۔
وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ سندھ میں اب تک کورونا وائرس کے ساڑھے 10 ہزار سے زائد ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں جن میں سے 986 مریضوں میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔ ایک ویڈیو بیان میں وزیراعلیٰ سندھ نے ڈاکٹروں اور پیرامیڈکس کو حفاظتی سازوسامان فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ طبی عملہ کورونا کے خلاف لڑائی میں فرنٹ لائن فائیٹرز ہے، ان کو ضروری لباس دینا ہماری ذمہ داری ہے۔۔ انہوں نے بتایا کہ سندھ میں کل تک 9 ہزار 585 ٹیسٹ کیے گئے تھے جب کہ آج مزید 634 ٹیسٹ کے بعد کُل ٹیسٹ کی تعداد 10ہزار 219 ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بتایا کہ صوبے میں آج مزید 54 کورنا کے کیسز سامنے آئے ہیں جس کے بعد سندھ میں کورونا کیسز کی تعداد 986 ہوگئی ہے جب کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ایک اور مریض کے انتقال کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 18 ہے۔انہوں نے بتایا کہ آج مزید 16 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جس کے بعد صحتیاب افراد کی تعداد 309 ہوگئی ہے۔وزیراعلی سندھ کے مطابق 396 مریض اپنے گھروں میں آئیسولیشن میں ہیں اور 206 کورونا کے مریض سرکاری اور نجی اسپتالوں میں زیرعلاج ہیں۔

تازہ ترین خبریں