03:12 pm
مفاہمت کر کے دیکھ لی،اب ہمیں مزاحمت کرنا پڑے گی۔۔

مفاہمت کر کے دیکھ لی،اب ہمیں مزاحمت کرنا پڑے گی۔۔

03:12 pm

لاہور(ویب ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما اور رکن پنجاب اسمبلی حنا پرویز بٹ نے کہا ہے کہ ہم نیب نیازی گٹھ جوڑ کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے،مفاہمت کر کے دیکھ لی، حمزہ شہباز بغیر کسی جرم کے ایک سال سے جیل میں ہے اور اب شہباز شریف صاحب کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے،اب ہمیں مزاحمت کرنا پڑے گی،نیب کی ٹیم اس لئے شہباز شریف کو گرفتار کرنے آئی کیونکہ ان کی گرفتاری سے ملک سے کورونا ختم ہوجائے گا،
معیشت آسمان کو چھوئے گی، ڈالر 50کاہو جائے گا، پھل اور سبزیاں 5روپے کلو ہو جائیں گی، اس لئے گرفتاری تو بنتی ہے۔تفصیلات کےمطابق مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پرٹویٹس کرتے ہوئے رکن پنجاب اسمبلی حنا پرویز بٹ نے کہا کہ جب کل لاہور ہائی کورٹ میں شہباز شریف کی درخواست کی سماعت ہے تو نیب کیسے شہباز شریف کو گرفتار کر سکتی ہے؟یہ اخلاقی اور قانونی طور پر غلط ہے،ہم نیب نیازی گٹھ جوڑ کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔انہوں نےکہاکہ شہبازشریف کو 2 جون کو طلب کیا گیا اور گرفتاری کے وارنٹس 28مئی کو دستخط شدہ تھے،اس سےاندازہ لگائیں کہ چیئرمین نیب کتنابدنیت ہے؟نیب کی ٹیم اس لئےشہباز شریف کو گرفتار کرنے آئی کیونکہ ان کی گرفتاری سے ملک سے کورونا ختم ہوجائے گا، معیشت آسمان کو چھوئے گی، ڈالر 50کاہو جائے گا، پھل اورسبزیاں5روپےکلو ہوجائیںگی،اس لئے گرفتاری تو بنتی ہے۔حناپرویز بٹ نے کہا کہ بد نیت نیب کو پتا تھا کہ شہباز شریف کی ضمانت کی درخواست پر سماعت کل ہے اور ان کو ضمانت مل جائے گی، اس لئے نیب آج ہی گرفتار کرنے آگئی،مشرف نے نیب کو سیاسی انتقام کیلئے بنایا اور اسکے شاگرد نیازی نے ڈکٹیٹر کے مشن کو آگے بڑھایا،ن لیگ کو پاور میں آنے کے بعد سب سے پہلے نیب کے پر کاٹنے چاہئیں تاکہ سیاسی انتقام تو ختم ہو ۔حناپرویز بٹ نے کہا کہ جہانگیر ترین کی بار کب آئے گی؟نیب کو اگر نیازی، بزدار ،جہانگیر ترین، خسرو کے بھائی، پرویز خٹک و دیگر کے گھر کا پتہ نہیں ہے تو میں بتا دیتی ہوں،چیئرمین نیب نیازی کی موسیقی پر ڈانس کر رہا ہے،کچھ لوگوں کو بہت تکلیف ہورہی ہے کہ شہباز شریف کیوں عدالت ضمانت کیلئے گئے؟جب نیازی گٹھ جوڑ سامنے نظر آ رہا ہو؟جب نیازی کے کہنے پر جھوٹا نیب خادم اعلیٰ کو گرفتار کرنے کی تیاری کر رہا ہو تو شہباز شریف صاحب کا حق ہے کہ عدالت کا دروازہ کھٹکھٹائیں،ان سے یہ حق کوئی نہیں چھین سکتا۔