08:35 am
آن لائن کلاسز کے بہانے استاد کے 15سالہ طالبہ کو بیہودہ پیغامات ، پھر کیا ہوا ، جانیں

آن لائن کلاسز کے بہانے استاد کے 15سالہ طالبہ کو بیہودہ پیغامات ، پھر کیا ہوا ، جانیں

08:35 am


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ) آن لائن کلاسز کے بہانے استاد کے 15سالہ طالبہ کو بیہودہ پیغامات ، پھر کیا ہوا ، جانیں ۔۔۔بھارت میں اساتذہ کے 15 سالہ طالبہ کو بے ہودہ پیغامات بھیجنے کا افسوس ناک واقع پیش آیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق اساتذہ نے لاک ڈاؤن کی وجہ سے آن لائن کلاسز کے بہانے ننھی طالبہ کا نمبر لیا جس کے بعد
اسے نامناسب اور بے ہودہ میسجز بھیجنے کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق طالبہ نے جب اس بارے میں اپنے دوسرے استاد کو شکایت کی تو اس نے بھی ہراساں کرنے والے پیغامات بھیجنے کا سلسلہ شروع کر دیا جس کے بعد یہ سارا معاملہ طالبہ کے لئے پریشانی کا سبب بن گیا۔ اس حوالے سے پولیس نے بتایا ہے کہ پہلے تو ننھی طالبہ پریشان ہو گئی لیکن بعد میں اس نے اپنے والدین کو اس واقعے کے بارے میں خبر دی۔ والدین کے لئے بھی یہ بات پریشانی کا سبب بنی لیکن انہوں نے ہمت دکھاتے ہوئے پولیس میں مقدمہ درج کروا دیا۔ اس بارے میں پولیس حکام کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ والدین کی شکایت کے بعد ملزم اساتذہ کو گرفتار کر لیا گیا ہے تا ہم اس معاملے میں مزی تفتیش کا سلسلہ جاری ہے۔ خیال رہے کہ یہ واقع بھارت کی شہر حیدرآباد میں پیش آیا ہے۔ بھارت میں یہ اس نوعیت کا پہلا واقع نہیں ہے۔ اس سے قبل بھی بھارت سے ایسے واقعات سامنے آتے رہے ہیں جس میں خواتین طلباء کو ہراساں کیا جاتا رہا ہے۔ کہیں ہراساں کیا جاتا رہا ہے تو کہیں زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔ ہر واقعے کے بعد پولیس کی جانب سے مقدمہ درج کردیا جاتا ہے جس کے بعد کارروائی کے بارے میں کسی کو کچھ نہیں بتایا جاتا۔ اس حوالے سے شاید دوبارہ بات بھی نہیں کی جاتی۔ حیدرآباد میں نوجوان ماڈل کے قتل کا معاملہ ہو یا نوجوان لڑکی سے زیادتی کا، ملزمان کی گرفتاری کے حوالے سے کسی کو اطلاع نہیں دی جاتی۔ اس واقعے میں بھی پولیس نے مقدمہ درج کر لیا ہے جس کے بعد بتایا جا رہا ہے کہ ملزمان کو گرفتار بھی کر لیا گیا ہے۔