02:36 pm
میرے جسم کے حصے آپ کے کھیل کے کھلونے نہیں ہیں، کچھ آداب سیکھیں اور ۔۔!

میرے جسم کے حصے آپ کے کھیل کے کھلونے نہیں ہیں، کچھ آداب سیکھیں اور ۔۔!

02:36 pm



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے بیان پر سنتھیارچی کا ردعمل سامنے آ گیا۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر یوسف رضا گیلانی کے بیان کا جواب دیتے ہوئے امریکی صحافی سنتھیارچی کا کہنا تھا کہ میرے جسم کے حصے آپ کے کھیل کے کھلونے نہیں ہیں، کچھ آداب سیکھیں اور اپنا احتساب قبول کریں۔ پیغام جاری کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مجھے آپ کی جاگیرداری ذہنیت ہونے سے بھی کوئی مطلب نہیں۔ میں نے کبھی 
آپ کو میرا جسم چھونے کی اجازت نہیں دی، اس لئے آپ اب اپنے احتساب کو قبول کریں۔ واضح رہے کہ امریکی خاتون نے الزام عائد کیا کہ مجھے رحمان ملک نے2011 میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ ایوان صدر میں یوسف رضا گیلانی نے دست درازی کی، مخدوم شہاب الدین نے بھی بدسلوکی کی۔ سنتھیا نے ایک ٹی وی پروگرام میں بتایا کہ انہیں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کا واقعہ ان دنوں میں پیش آیا جب اسامہ بن لادن آپریشن ہوا تھا۔ مجھے ملاقات کیلئے بلایا گیا تھا، میرا خیال تھا کہ یہ میرے ویزے سے متعلق ملاقات ہوگی، لیکن مجھے پھول دیے گئے اور میرے مشروب میں نشہ آور چیز ڈال دی گئی۔ تاہم پیپلز پارٹی رہبماؤں کی جانب سے ان تمام الزامات کو مسترد کر دیا گیا ہے جبکہ ترجمان رحمان ملک کا کہنا تھا کہ امریکی صحافی نے یہ بیانات کسی ایک مخصوص گروہ کے کہنے پر لگائے ہیں جبکہ دوسری جانب مخدوم شہاب الدین کا کہنا تھا کہ سینتھیارچی نے یہ الزامات سستی شہرت حاصل کرنے کے لئے لگائے ہیں۔ اس حوالے سے پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماء اور سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے اپنے ردعمل میں کہا کہ امریکی خاتون نے شہید بےنظیر پرعجیب وغریب الزامات لگائے۔ کوئی بھی شہید بی بی پر الزام برداشت نہیں کرسکتا۔ علی حیدر گیلانی اور علی قاسم اس معاملے پرعدالت میں چلے گئے۔ انہوں نے کہا کہ وزیرعظم کےعہدے کا آدمی ایوان صدر میں کیا ایسی حرکت کرسکتا ہے۔