05:14 am
حکومت کی نااہلی،باران رحمت کو زحمت بنادیا، شہرقائد تالاب میں تبدیل ،متعدد افراد کی جانیں چلی گئیں

حکومت کی نااہلی،باران رحمت کو زحمت بنادیا، شہرقائد تالاب میں تبدیل ،متعدد افراد کی جانیں چلی گئیں

05:14 am

کراچی (نیوز ڈیسک) این ڈی ایم اے اور محکمہ موسمیات کی کی پیشگوئی کے باوجود سندھ حکومت اقدامات کرنے میں ناکام ۔نالہ اور گٹر ابلنے سے سڑکیں، انڈر پاسز اور رہائشی علاقے تالاب بن گئے۔ ٹریفک جام سے لاکھوں افراد متاثر، گاڑیاں خراب ہونے سے سینکڑوں شہری خوار اور مختلف حادثات میں پانچ افراد جاں بحق ہو گئے۔ شہر کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی فراہمی بھی معطل ہو گئی۔تفصیل کے مطابق شہر قائد میں مون سون کی پہلی برسات ہوتے ہی سندھ سرکار کا رین ایمرجنسی پلان فلاپ ہو گیا ہے۔ باران رحمت شہریوں کیلئے حکومتی نااہلی کے باعث پھر زحمت بن گئی۔ہزاروں ٹن کچرے
کے ڈھیر لگنے کے باعث متعدد مقامات پر نالے ابل پڑے۔ نکاسی آب کے مسائل کے باعث شاہراہ فیصل سمیت دیگر سڑکیں اور انڈر پاسز ڈوب گئے۔ ٹریفک جام اور گاڑیوں خراب ہونے کے باعث شہریوں کو سخت مشکلات درپیش رہی۔ صفائی کے عمل میں تاخیر کے باعث مختلف مقامات پر نالہ ابلنے سے رہائشی علاقوں میں بھی گندا پانی جمع ہوگیا۔ پی ای سی ایچ ایس بلاک سکس اور محمود آباد گوٹھ کے سنگم پر واقع اوور ہیڈ ریلوے ٹریفک کے نیچے کئی فٹ پانی جمع ہونے سے گزرگاہ بند ہو گئی۔شہر کے کئی علاقوں میں برسات ہوتے ہی بجلی غائب ہو گئی۔ کورنگی کے علاقے میں ٹرانسفارمر دھماکا سے پھٹ پڑا۔ ملیر سعود آباد، جعفر طیار، لانڈھی، کورنگی، فیڈرل بی ایریا، نارتھ ناظم آباد، ارونگی ٹاؤن، بلدیہ ٹاؤن اور منگھو پیر سمیت متعدد علاقوں میں بجلی معطل ہونے کے باعث شہری سخت اذیت سے دوچار رہے۔ چھت گرنے اور دیگر حادثات میں پانچ افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔سب سے زیادہ بارش صدر میں 42 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔ پی اے ایف بیس فیصل میں 26، ناظم آباد میں 22، اولڈ ائیرپورٹ پر دس جبکہ پی اے ایف مسرور میں 12 ملی میٹرریکار بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق بارشوں کا سلسلہ آٹھ جولائی تک جاری رہے گا۔