03:23 pm
کراچی میں تخریب کاری کی کسی بڑی ممکنہ کارروائی کے خدشات

کراچی میں تخریب کاری کی کسی بڑی ممکنہ کارروائی کے خدشات

03:23 pm


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) چند روز قبل ہونے والے سٹاک ایکسچینج کی عمارت پر حملے کے بعد ایک بار ملک دشمن عناصر کی جانب سے شہر کے حساس مقامات پر کسی تخریب کار کارروائی کے خدشات ہیں۔کراچی کے آٹھ انتہائی حساس مقامات پر سپیشل سکیورٹی یونٹ کے کمانڈوز کو تعینات کردیا گیا ہے۔ ایس ایس یو کے سربراہ ڈی آئی جی مقصود میمن نے نجی ٹی وی چینل جیو نیوز سے خصوصی گفتگو کے دوران بتایا کہ  ماضی میں ایس ایس یو کی اسپیشل ویپن اینڈ ٹیکٹیس ٹیم کراچی میں حسن اسکوائر پر واقع ایس ایس یو ہیڈکوارٹر میں تعینات تھی۔انہوں نے کہا کہ یہ کمانڈوز شہر میں کسی
بھی طرح کے حالات سے نمٹنے کیلئے الرٹ رہتے تھے مگر کراچی میں دہشتگردی کی حالیہ ناکام کارروائی کے بعد شہر میں حفاظتی انتظامات کو فول پروف بنانے کیلئے ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن نے خصوصی ہتھیاروں اور حکمت عملی کی ٹیموں یعنی ایس ڈبلیو اے ٹی کمانڈوز کی تعیناتی کے پوائنٹ بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا۔ مقصود میمن کے مطابق کراچی پولیس چیف کی نشاندہی پر ان کمانڈوز کو اب پورے کراچی میں پھیلایا گیا ہے، ان کمانڈوز کی تعیناتی کے 8 مقامات کو سیکیورٹی کے دیگر اداروں کے کنٹرول رومز سے منسلک کردیا گیا ہے، اس کا مقصد شہر میں خدانخواستہ دہشتگردی کی کسی کارروائی کی صورت میں فوری جوابی کاروائی کیلئے کمانڈوز کے پہنچنے کا دورانیہ کم سے کم کرنا ہے۔ مقصود میمن نے بتایا کہ ایس ایس یو کمانڈوز بین الاقوامی طرز کی خصوصی تربیت کے بعد جدید طریقے ہتھیاروں سے لیس ہیں

تازہ ترین خبریں