07:42 am
کرونا وائرس کے مریضوں میں کہاں کہاں وائرس موجود ہوتا ہے ، انکشاف نے پاکستانیوں کو لرزا کر رکھ دیا کیونکہ ۔۔!

کرونا وائرس کے مریضوں میں کہاں کہاں وائرس موجود ہوتا ہے ، انکشاف نے پاکستانیوں کو لرزا کر رکھ دیا کیونکہ ۔۔!

07:42 am


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )کرونا وائرس کے مریضوں میں کہاں کہاں وائرس موجود ہوتا ہے ، انکشاف نے پاکستانیوں کو لرزا کر رکھ دیا کیونکہ ۔۔! کورونا کے مریضوں کے پیشاب اور فضلے میں بھی وائرس ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں اس حوالے سے ویٹرنری سائنس یونیورسٹی لاہور کی تحقیق سامنے آئی ہے۔ یونیورسٹی کے ڈائریکٹر مائیکرو بائیولوجی ڈاکٹر طاہریعقوب کا کہنا تھا کہ تحقیق کے دوران 40 مریضوں کے پیشاب اور فضلے میں کورونا وائرس پایا گیا جب کہ مریضوں کے علاقے میں سیوریج کے بھی ٹیسٹ لیے گئے تھے اور ان نمونوں میں بھی وائرس موجود تھا۔
ان کا کہنا تھا کہ تحقیق مکمل کرنے کے بعد حکومت کو ہدایت کی ہے کہ اسمارٹ لاک ڈاؤن سے پہلے اسمارٹ سرویلنس کی جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ کورونا کے ٹیسٹوں کے دوران لوگوں نے اپنے پتے 
غلط بھی لکھوائے تھے، سیوریج سےٹیسٹ کرنے سے پتہ چل جائے گا کہ علاقے میں کورونا وائرس ہے یا نہیں۔ خیال رہے کہ پوری دنیا کی طرح اس وقت کورونا وائرس نے پاکستان میں بھی اپنے قدم جما لئے ہیں۔ تاہم دوسری جانب عالمی ادارہ صحت کی کورونا کے خلاف اقدامات میں پاکستان کی تعریف سامنے آئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان اور سربراہ عالمی ادارہ صحت ڈاکٹر ٹیڈروس ادھانوم کے درمیان ویڈیو لنک کے ذریعے گفتگو ہوئی ہے جس میں عالمی ادارہ صحت کی جانب سے کورونا کے خلاف پاکستان کے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے انہیں قابل ستائش قرار دیا گیا ہے۔ ڈاکٹر ٹیڈروس نے کہا کہ کورونا وبا سے نمٹنے کے لئے پاکستان کے اقدامات قابل ستائش ہیں جبکہ وزیراعظم عمران خان نے عالمی برادری کی مدد کے حوالے سے ڈبلیوا یچ او کے کردار کو سراہا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہیلتھ کیئر سہولیات کی فراہمی کے لئے سائنسی بنیادوں پر حکمت عملی اختیار کی ہے۔ پاکستان میں اگر کورونا کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے تو اب تک پاکستان میں کورونا وائرس کے باعث 4700 سے زائد افراد جاں بحق ہوچکے ہیں جب کہ متاثرہ مریضوں کی تعداد 2 لاکھ 33 ہزار سے تجاوز کرچکی ہے۔