02:48 pm
نئی سیاسی جماعت بننے کی خبریں، قائد کون ہو گا؟ پاکستانیوں  کیلئےسب سےبڑی اور حیران کن خبر آگئی

نئی سیاسی جماعت بننے کی خبریں، قائد کون ہو گا؟ پاکستانیوں کیلئےسب سےبڑی اور حیران کن خبر آگئی

02:48 pm


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ) نئی سیاسی جماعت بننے کی خبریں، قائد کون ہو گا؟ پاکستانیوں  کیلئےسب سےبڑی اور حیران کن خبر آگئی۔۔۔ سینئر صحافی حامد میر کا کہنا ہے کہ اگر کوئی نئی سیاسی جماعت بنی تو اس کے قائد نواز شریف ہوں گے۔تفصیلات کے مطابق کچھ خبریں سامنے آ رہی ہیں کہ متحدہ مسلم لیگ کے نام سے مسلم لیگ کے تمام دھڑوں کو یکجا کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ اس حوالے سے صحافی و اینکر شاہزیب خانزادہ نے نجی ٹی وی
چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ یہ باتیں سامنے آئی ہیں کہ مسلم لیگ کے تمام دھڑوں کو یکجا کر کے ایک متحدہ مسلم لیگ بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ شاہزیب خانزادہ کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے سینئر صحافی حامد کی جانب سے اہم انکشافات کیے گئے ہیں۔ حامد میر کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ مسلم لیگ کے دھڑوں کویکجا کرنے کی سنجیدہ کوششیں ہو رہی ہیں۔ یہ کوششیں کچھ پرانے لیگیوں اور خود مسلم لیگ ن کی جانب سے کی جا رہی ہیں۔ حامد میر کا کہنا ہے کہ ماضی میں بھی ایسی کوششیں کی جاتی رہی ہیں۔ ماضی میں نواز شریف اور چوہدری شجاعت حسین کے درمیان معاملات طے کرنے کی کوششیں کی گئی تھیں، تاہم پرویز الہیٰ اور شہباز شریف کے اعتراضات کی وجہ سے معاملات آگے نہیں بڑھ سکے تھے۔ حامد میر کا مزید کہنا ہے کہ حکمراں جماعت تحریک انصاف کے کچھ لوگ کہتے ہیں کہ ان کے علاوہ اور کوئی آپشن نہیں ہے۔ اب جو مسلم لیگ کے دھڑوں کو یکجا کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں، تو ایسے تحریک انصاف کے لوگوں کو پیغام دیا جا رہا ہے کہ کسی غلط فہمی میں نہ رہیں، آپ کے علاوہ بھی آپشن موجود ہے۔ سینیئر تجزیہ نگار حامد میر نے کہا ہے کہ تمام مسلم لیگ کو جمع کرکے نئی مسلم لیگ بنانے کا آئیڈیا ن لیگ کی طرف سے آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن صرف پنجاب میں ہے اسی طرح پیپلز پارٹی سندھ کی جماعت ہے۔اگرچہ پی ٹی آئی کی پنجاب میں کافی نشستیں ہیں لیکن پی ٹی آئی کو خیبر پختونخوا کی جماعت سمجھا جاتا ہے۔گزشتہ ڈیڑھ ماہ میں سندھ اور خیبرپختونخوا کے کچھ مسلم لیگ ن کے ارکان پارلیمنٹ نے اپنی پارٹی میں گفتگو شروع کی ہے کہ ق لیگ،فنکشنل اور کچھ گروپ کے ساتھ اتحاد کرکے قومی جماعت بن کر سامنے آئے۔مسلم لیگ ن کو ق لیگ سے اتحاد کا فائدہ پنجاب میں ہوگا۔جب کہ فنکشنل لیگ سے اتحاد کا فائدہ سندھ میں ہوگا۔یہ بات ہے کہ نئی مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف ہی ہوں گے، اس نئی جماعت کو ایک نیا آپشن بنانے کی کوشش کی جائے گی۔

تازہ ترین خبریں