03:02 pm
"ٹی وی فیس کی رقم کی مد میں ہر سال اربوں روپیہ حکمرانوں کی جیبوں میں جاتا ہے"

"ٹی وی فیس کی رقم کی مد میں ہر سال اربوں روپیہ حکمرانوں کی جیبوں میں جاتا ہے"

03:02 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) "ٹی وی فیس کی رقم کی مد میں ہر سال اربوں روپیہ حکمرانوں کی جیبوں میں جاتا ہے"، وزیراعظم عمران خان کا ماضی میں دیا گیا بیان سوشل میڈیا پر وائرل، ٹی وی فیس کی رقم کس مقصد کیلئے استعمال ہوتی ہے، عوام نے تفصیلات بتانے کا مطالبہ کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق بجلی کے بلوں میں وصول کی جانے والی پی ٹی وی فیس میں کئی گنا اضافہ کیے جانے کے بعد وزیراعظم عمران خان شدید تنقید کی زد میں ہیں۔ سوشل میڈیا پر وزیراعظم کی ایک پرانی ویڈیو زیر گردش ہے، جس میں ان کے پرانے بیان دکھا کر ناصرف انہیں تنقید کا نشانہ
بنایا جا رہا ہے۔ اپنے پرانے بیانات میں وزیراعظم کہتے تھے کہ یہ ہمارا پیسہ جس کے بارے کسی کو معلوم نہیں کہ اسے کس مقصد کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ اس فیس سے پیسوں والوں کو فرق نہیں پڑتا لیکن غریب آدمی کو اس سے فرق پڑتا ہے۔ وزیراعظم عمران خان ایم ڈی پی ٹی وی کو مخاطب کر کے کہتے تھے کہ آپ کو شرم نہیں آتی کہ آپ نواز شریف کے پتلے بنے ہوئے ہیں اور انہیں تحفظ دے رہے ہیں، جبکہ یہ پیسہ ہمارا ہے۔ اب وزیراعظم نے ان تمام بیانات کو لے کر انہیں ہی تنقید کا نشانہ بنانے کے علاوہ ان سے سوال بھی کیا جا رہا ہے کہ پی ٹی وی فیس کی مد میں سالانہ اربوں روپے اکٹھے کیے جاتے ہیں، تو بتایا جائے کہ یہ رقم کس مقصد کیلئے استعمال ہوتی ہے۔حکومت بتائے عوام سے اکٹھا کیے جانے والا اربوں روپیہ کہاں جاتا ہے۔ واضح رہے کہ حکومت نے پاکستان ٹیلی ویژن کی ماہانہ لائسنس فیس بڑھانے کی منظوری دے دی۔ سرکاری ادارے پاکستان ٹیلی ویژن نے عوام سے 20ارب روپے اکٹھے کرنے کا منصوبہ بنا لیا۔اطلاعات کے مطابق وفاقی حکومت نے کابینہ سے پی ٹی وی کی فیس بڑھانے کی منظوری لے لی ہے اور پی ٹی وی کی فیس 35 بڑھا کر100 روپے کردی گئی ہے۔