07:10 am
اربوں روپے کے فراڈ کا الزام۔۔ ایف آئی اے نے پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین اور انکے بیٹے کے گرد شکنجہ کس دیا

اربوں روپے کے فراڈ کا الزام۔۔ ایف آئی اے نے پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین اور انکے بیٹے کے گرد شکنجہ کس دیا

07:10 am

لاہور (ویب ڈیسک) ایف آئی اے نے 15 ارب روپے کے کارپوریٹ فراڈ کے معاملے میں پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے علی ترین کو دوبارہ طلب کر لیا ہے۔ نجی ٹی وی نیوز چینل کے مطابق وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے نے جہانگیر ترین کو یکم اکتوبر جب کہ ان کے بیٹے علی ترین کو 30 ستمبر کو طلب کیا ہے۔ ایف آئی اے ذرائع کے مطابق کارپوریٹ فراڈ کے ذریعے پندرہ ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی گئی ہے 
اور اس بات کے ثبوت شوگر کمیشن کو دوران تحقیقات ملے، جس کے بعد اس پر ایف آئی اے نے تحقیقات شروع کی۔ ایف ائی اے نے اس حوالے سے 100 سے زائد سوالات تیار کر رکھے ہیں اور ان سوالات کے جوابات ترین فیملی سے درکار ہیں، یہ سوالات جہانگیر ترین اور بیٹے کو بھجوائے بھی گئے ہیں۔ واضح رہے کہ اس سے قبل ایف آئی اے کی جانب سے علی ترین کو 18 جبکہ جہانگیر ترین کو 19 ستمبر کو طلب کیا گیا تھا مگر وہ برطانیہ میں ہونے کی وجہ سے پیش نہ ہوئے اور ایف آئی اے سے وقت مانگا تھا۔ وفاقی تحقیقاتی ایجنسی نے کارپوریٹ فراڈ اور منی لانڈرنگ کیس میں تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین اور انکے بیٹے علی ترین کو دوبارہ طلب کر لیا ہے۔ ذرائع کے مطابق جہانگیر ترین کے بیٹے علی ترین کو 30 ستمبر جبکہ جہانگیر ترین کو یکم اکتوبر کو طلب کیا گیا ہے۔ ایف آئی اے ذرائع کے مطابق منی لانڈرنگ کیس پر ایف آئی اے نے 100 سے زائد سوالات تیار کر رکھے ہیں جن کے جوابات ترین فیملی سے درکار ہیں۔ اس سے قبل بھی ایف آئی اے نے علی ترین کو 18ستمبر جبکہ جہانگیر ترین کو 19 ستمبر کو طلب کیا تھا۔ رواں سال کے آغاز میں پیدا ہونے والے چینی بحران پرایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا تھا کہ ملک میں چینی بحران کا سب سے زیادہ فائدہ حکمران جماعت کے اہم رہنما جہانگیر ترین نے اٹھایا۔