01:34 pm
اب مختلف قسم کا عمران خان آنے والا ۔۔۔ چوروں، ڈاکوؤں کو کسی قسم کا پروڈکشن آرڈر نہیں ملے گا

اب مختلف قسم کا عمران خان آنے والا ۔۔۔ چوروں، ڈاکوؤں کو کسی قسم کا پروڈکشن آرڈر نہیں ملے گا

01:34 pm

اسلام آباد(ویب ڈیسک )وزیراعظم عمران خان نے ٹائیگر فورس کی تقریب سے خطاب میں اپوزیشن کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ اب مختلف قسم کا عمران خان آنے والا ہے، چوروں اور ڈاکوؤں کو کسی قسم کا پروڈکشن آرڈر نہیں ملے گا۔وزیراعظم عمران خان نے اپنی ٹائیگر فورس کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا 'گزشتہ رات جو سرکس ہوئی اس پر کچھ بات کروں گا'۔انہوں نے کہا کہ اس سرکس میں بڑے فنکار تھے مگر آپ کے سوئی ڈیزل پرکیوں اٹک گئی ہے۔اس دوران ٹائیگرفورس کی نعرے بازی کی وجہ سے وزیراعظم نے خطاب روک دیا۔گندم کی کمی
اور مہنگائی پر وزیراعظم کہا کہ دو سال ملک میں گندم کی کم پیداوار ہوئی جس کی وجہ غلط ٹائم پر بارشیں ہیں، اُس وقت بارشیں ہوئیں جب گندم کی کٹائی کا وقت تھا، ہمیں 27 لاکھ ٹن گندم چاہیے تھی، بارش کی وجہ سے خسارہ ہوا۔انہوں نے کہا کہ جب گندم کم ہوئی قیمتیں اوپر جانا شروع ہوئیں، ہمیں دیر سے پتا چلا جب تک باہر سے گندم درآمد کی تو ملک میں ذخیرہ اندوزی شروع ہوگئی۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مہنگائی کی بہت وجوہات ہیں، ہمارا روپیہ گرا، ہمیں حکومت ملی تو تاریخ کا بڑا 40 ارب ڈالر کا خسارہ تھا، جب یہ خسارہ ہوتا ہے کہ ڈالر کی کمی ہوتی ہے، روپیہ کی قدر کم ہوجاتی ہے، ایسے میں باہر سے جو چیزیں لیتے ہیں وہ مہنگی ہوجاتی ہیں، ہم دالیں باہر سے لیتے ہیں وہ مہنگی ہوگئیں۔ان کا کہنا تھا کہ تھوڑے سے لوگ چینی بناتے ہیں لیکن وہ طاقتور ہیں، دونوں خاندان شریف اور زرداری خاندان کی ملیں ہیں، ان کی من مانی ہوتی تھی لیکن اب پہلی بارجو ہم پلان لیکر آرہے ہیں، اس سے آگے ایسے مہنگی چینی نہیں ملے گی۔وزیراعظم عمران خان نے ٹائیگر فور س کو ہدایت کی کہ کہیں خود جاکر مداخلت نہیں کرنی، موبائل فون کے ذریعے تصویر لیکر پورٹل پر ڈالنی ہے پھر انتظامیہ کا کام ایکشن لینا ہے، دکانوں پر قیمتوں کی فہرست نہ لگی ہو تو اس کی بھی تصویر دینی ہے۔وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن پر تنقید سے قبل نعرے بازی کرنے پر ٹائیگر فورس کو ہدایت کی کہ خاموش ہوجائیں اگر خاموش نہ ہوئے تو انجوائے کیسے کریں گے۔اس دوران وزیراعظم نے اسکرین پر نواز شریف کی تصاویر دکھاکر دعویٰ کیا کہ نواز شریف لندن جانے کے لیے ڈرامے بازی کی۔ وزیر اعظم نے مریم اور بلاول کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ میں نے 11 سال قبل پیش گوئی کی تھی جب چوروں کی چوری پر ہاتھ پڑے گے تو سب اکٹھے ہوں گے، گزشتہ روز دو بچوں نے تقریریں کیں، ان پر بات نہیں کرنا چاہتا، ایک ان میں سے نانی ہوگئی ہے لیکن وہ میرے لیے بچی ہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ انسان جدوجہد نہیں کرتا وہ لیڈر ہی نہیں بن سکتا اور انہوں نے ایک گھنٹہ حلال کا کام نہیں کیا اور وہ لیکچر دے رہے ہیں، اور یہ اپنے باپوں کی حرام کی کمائی پر پلے ہوئے ہیں۔