04:05 pm
طلال چودھری تشدد معاملےکی مزید تفصیلات سامنے آگئیں

طلال چودھری تشدد معاملےکی مزید تفصیلات سامنے آگئیں

04:05 pm

 فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)طلال چودھری تشدد واقعے کے حقائق رفتہ رفتہ کھل کر سامنے آنے لگے ہیں۔ سینئر ملکی صحافی اور تجزیہ کار ہارون رشید نے انکشاف کیا ہے کہ طلال چودھری عائشہ رجب علی کے بیٹے کو اپنی ماں کے خلاف ورغلا کر ان کے گھرمیں فساد برپا کرنا چاہتے تھے۔ ہارون رشید کا کہناتھا کہ جب طلال چودھری وزیر مملکت برائے داخلہ تھے تب انھوںنے عائشہ رجب علی کے موبائل فون کی کالز اور میسجز کا ڈیٹا نکلوا کر ان کے بیٹےکو دکھایا اور یہ باور کروانے کی کوشش کی کہ اس کی والدہ کسی غلط آدمی سے رابطے میں تھیں اور شادی کی پلاننگ کررہی تھیں۔ 
جس پر بیٹا مشتعل ہو کر گھر گیااور اپنی والد ہ سے جھگڑا کیا۔ تاہم اس کی والدہ نے الزامات کی تردید کی تھی۔ اس معاملے پر اس لڑکے ماموں یعنی عائشہ رجب علی کے بھائی نے مداخلت کی اور عائشہ رجب کے بیٹے سے پوچھا کہ اسے یہ سب کس نے بتایا۔ بیٹےکے اپنی ماں اور ماموںکو سب کچھ بتانے پر عائشہ فیملی نے طلال چودھری کو گھر بلوایا اور اتنا مارا پیٹا کہ ان کا بازو ٹوٹ گیا۔ طلال چودھری وہاں سے ایک اور لیگی رہنما کے گھر گئے اور اپنا موبائل فون واپس لینے دوبارہ عائشہ رجب علی کے گھر آئے جس پر عائشہ رجب علی نے ان کے ساتھ گارڈز وغیرہ دیکھ کر پولیس کو بلوالیا،