07:18 am
خفیہ اداروں سے گزارش ہے کہ سیاستدانوں اور صحافیوں کا پیچھا  کرنے کی بجائے ۔۔سینئر صحافی حامد کا پشاور دھماکے پر رد عمل آ گیا

خفیہ اداروں سے گزارش ہے کہ سیاستدانوں اور صحافیوں کا پیچھا کرنے کی بجائے ۔۔سینئر صحافی حامد کا پشاور دھماکے پر رد عمل آ گیا

07:18 am

اسلام آباد(ویب ڈ یسک )پشاور کے علاقے دیر کالونی میں مدرسے میں تدریسی عمل جاری تھا کہ اچانک دھماکہ ہو گیا جس کے نتیجے میں پانچ بچے شہید ہو گئے ہیں جبکہ 50 زخمی ہیں جنہیں طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کر دیا گیاہے ۔تفصیلات کے مطابق پشاور کے مدرسے میں ہونے والے دھماکے پر ہر کوئی افسردہ ہے اور بچوں کے شہادت نے دلوں کو زخمی کر دیاہے ، اس معاملے پر
اب سینئر صحافی حامد میر بھی میدان میں آ گئے ہیں اور انہوں نے سخت الفاظ میں پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ”پشاور کے ایک دینی مدرسے کی مسجد میں مشکوک شخص نے بیگ میں بم رکھا اور چلا گیا تھوڑی دیر بعد بم دھماکہ ہو گیا کئی شہید اور زخمی ہو گئے، خفیہ اداروں سے گذارش ہے کہ صرف تھریٹ الرٹ جاری کر دینا کافی نہیں ہوتا وہ سیاستدانوں اور صحافیوں کی بجائے بم دھماکے کرنے والوں کا پیچھا کریں۔“بتایا جارہاہے کہ مدرسے میں 60 سے زائد افراد موجود تھے جبکہ زخمی ہونے والے بچوں کی عمریں 11 سال سے 17 سال کے درمیان ہیں ۔