06:43 am
اویس نورانی کے آزادبلوچستان کے نعرے پر شبلی فراز اور منصورعلی خان میں بحث

اویس نورانی کے آزادبلوچستان کے نعرے پر شبلی فراز اور منصورعلی خان میں بحث

06:43 am

اسلام آباد(ویب ڈیسک )نجی ٹی وی کے میزبان منصورعلی خان نے پی ڈی ایم جلسےمیں اویس نورانی کے آزاد بلوچستان کے مطالبے ان کی وضاحت کے حوالے بات کیجس پر وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز سے اس حوالے بات کی تو شبلی فراز نے بھی میزبان سے ان کا موقف پوچھا جس پر منصور علی خان نے کہا کہ اویس نورانی صاحب وضاحت کرچکےہیں کہ جوکچھ کوئٹہ جلسےمیں کہا وہ سلپ آف ٹنگ تھا، میری بات کو ٹوئسٹ کردیا گیا، انہوں نے معذرت بھی کرلی ہے،
کیا ان کی وضاحت کافی نہیں ہے؟شبلی فراز سے جواب دیا کہ کلپس چلا کردیکھ لیں زبان پھسلی ہے یا نہیں؟ اور اگر ایسا ہوا بھی تو کیا کسی بھی پی ڈی ایم رہنما جلسے معذرت کی اس بیان سے لاتعلقی کا اعلان کیا؟ یا کہا کہ زبان پھسل گئی تو وضاحت کریں،اب عوام فیصلہ کریں انہوں نے صحیح کہا تھا یا غلط؟جمعیت علماء پاکستان کے سیکرٹری جنرل اور پی ڈی ایم رہنما شاہ اویس نورانی نے پی ڈی ایم جلسے میں آزاد بلوچستان کا مطالبہ کیا تھا ساتھ ہی کہا تھا کہ اگر احتساب کرنا ہے توجنرل ضیاء اورمشرف بگھوڑے کا کرو، اگر احتساب کےعمل کا نام مولانا فضل الرحمان ،آصف زرداری، میاں نوازشریف ہے تو ہم اس احتساب کےعمل کو جوتی کی نوک پر رکھتے ہیں۔جس کے بعد شاہ اویس نورانی نے کہا تھا کہ کوئٹہ جلسے میں آزاد پاکستان کی بات کر رہا تھا مگر زبان پھسل گئی، اویس نورانی کے اس بیان پر وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کا بیانیہ ملک دشمن عناصر کی تائیدکر رہاہے، اویس نورانی نے جلسے کے اسٹیج سے آزاد بلوچستان کا نعرہ لگایا جس کی مذمت کرتے ہیں،وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے بھی تنقید کی تھی۔