11:22 am
نوازشریف کے انتہائی قریبی ساتھی کا برطانیہ  میں بڑا فراڈ۔۔ برطانوی حکام چکراکر رہ گئے

نوازشریف کے انتہائی قریبی ساتھی کا برطانیہ میں بڑا فراڈ۔۔ برطانوی حکام چکراکر رہ گئے

11:22 am

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )اگر آپ پاکستان میں کرپشن کرتے ہیں اورپاکستان کے اداروں اورفوج کوگالی دیتے ہیں توبہت سے غیرملکی خبررساں ادارے آپ کوسپورٹ کریں گے۔لیکن اگرآپ وہی کرپشن برطانیہ میں یاکسی اوردوسرے ملک میں کریں گے تویہی ادارے آپ کوپکڑ لیں گے۔مسلم لیگ ن برطانیہ کے نائب صد رعمران سعید شیخ جس نےبرطانیہ میں حجام کی دکان کالائسنس لے رکھاہےاس کاکرپشن کاایک سکینڈل سامنے آیاہے
کچھ عرصہ قبل جب میاں نواز شریف پاکستان میں ایک جیل میں بندتھے اوران کے ڈاکٹر نے کہاکہ ان کی طبیعت بہت خراب ہے اوران کوعلاج کے لیے بیرون ملک لے کرجاناپڑے گا۔عمران سعید شیخ ان پہلے لوگوں میں تھاجونیب کے دفترکے سامنے سب سے پہلے پہنچااس نے لوگوں کواکٹھاکیااس کے بعد میاں نواز شریف کوہسپتال شفٹ کردیاگیاجس کے بعد یہ ہسپتال کے باہربھی موجودرہا۔یہ شریف فیملی کے ساتھ اکثر دیکھاجاتاہے۔
برطانیہ کی حکومت نے ایک منصوبہ بنایاکہ ہم تعلیم کے فروغ کے لیے طلبہ کوقرض دیں گے اوراس کانام ہے سٹوڈنٹس لون۔یہ سکیم بہت بڑی ہے جس کاتخمینہ پاکستانی روپے میں دوہزارایک سوبیس ارب روپے بنتاہے۔برطانوی خبررساں ادارے بی بی سی کی ٹیم نے دس مہینے تک اس کی تحقیقات کیں اوراس کے بعدا نہوں نے کرپشن کاایک بہت بڑاسکینڈل پکڑاہے۔جس کاطرہ امتیاز ایک پاکستانی عمران سعید شیخ کوجاتاہے ۔برطانیہ 85ارب روپے سالانہ 100کے قریب پرائیویٹ کالجز کودیتاہے۔اوریہ ہرسال ان کالجز کودیتاہے۔ایک طالبعلم پاکستانی 36لاکھ روپے تک لے سکتاہے اورجب وہ پروفیشنل لائف میں آتاہے تووہ پیسہ واپس
کرسکتاہے۔عمران سعید شیخ برطانیہ میں ایجوکیشنل ایجنٹ کے طورپربھی کام کررہاتھا۔یہ وہاں نائیوں کاکام کرتاہے لیکن اس نے ایساہاتھ ماراکہ برطانیہ کے ادارے چکراکررہ گئے۔ان کے تووہم وگماں میں بھی نہیں تھاکہ تعلیم کے لیے ہم جوپیسے دیتے ہیں ان میں بھی کوئی اس طرح سے چوری کرے گا۔عمران سعید شیخ بوگس طالب علم بناتاتھا،برطانوی خبررساں ادارے بی بی سی نے اس کے خلاف ایک سٹنگ آپریشن کیاایک طالبعلم کواس کے پاس بھیجااس نے اس کے ساتھ تعلقات بنائے اوردس مہینے بعد اس کے ہاتھ میں ڈگری آگئی۔قرضہ سرکار کااستعمال ہوازیادہ پیسے یہ لے گیاتھوڑے سے پیسے طالبعلم کوملے
اورڈگری بھی مل گئی ۔وہ پریشان ہوگئے کہ یہ کیاہوگاڈگری چیک کروائی تووہ بھی اصلی نکلی۔یہ آنیوالے لوگوں کوکہتاتھاکہ آپ نے آناہے اوربیٹھناہے ڈمی کے طورپر۔یہ جعلی طالبعلم تیارکرتاتھاان کوکالجز میں جعلی داخلہ دلواتاتھاان کی جعلی حاضریاں لگواتاتھاان کی اسائنمنٹس جمع کرواتاتھااورپھرآخرمیں ڈگری بھی دلواتاتھا۔جوطالبعلم کوبرطانوی حکومت سے قرض ملتاتھاتواس میں سے بیس پچیس لاکھ یہ لے جاتاتھاباقی وہ طالبعلم کودے دیتاتھاجب طالبعلم کہتاتھاکہ میں پروفیشنل لائف میں اتنے پیسے نہیں کمارہاتوہ لون کے اندرکوئی نہ کوئی گنجائش نکال لیتے تھے۔اورکوئی زیادہ تنگ ہوتاتھاتووہ پاکستان واپس آسکتاہے۔یاحکومت کوکہہ سکتاہے
کہ میں کماہی نہیں رہامیں قرض واپس کیسے کروں گااورجب ڈگری مل جاتی ہے تونوکری بھی مل جاتی ہے۔اس بندے نے دونمبرطریقے سے پیسے کمارہاتھااس بندے نے پاکستانی روپے کے حساب سے اربوں روپے کی کرپشن کی۔

تازہ ترین خبریں