11:45 am
نوازشریف کی وہ غلطی جس نے انھیں تیسری بار سزا دی

نوازشریف کی وہ غلطی جس نے انھیں تیسری بار سزا دی

11:45 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) 1999میں پرویز مشرف دورکے ایک منتخب عوامی حکومت کو گرا کر اقتدارپر قبضے کرنے کے بعد مسلم لیگ (ن) اورپیپلزپارٹی دونوں ایک ہی جیسے تلخ تجربات سے گزر چکی تھیں۔ 1988میں قائم ہونے والی پیپلزپارٹی کی بے نظیر حکومت صرف 20ماہ بعد 1990میں گرا دی گئی۔ جبکہ 1990میں برسراقتدارآنے والی نوازحکومت کو بھی تین سال بعد 1993میں چلتا کر دیا گیا۔ پھر 1996میں فاروق لغاری نے اسمبلیاں ایک بار پھر صرف تین سالہ مدت کے بعد تحلیل کرتے ہوئے پیپلزپارٹی حکومت کا خاتمہ کیا جبکہ اس کے اڑھائی سال بعد نوازشریف کی حکومت اکتوبر 1999میں جنرل
پرویز مشرف نے ختم کردی۔ یہ سب کچھ پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ (ن) کےلئے ایک بڑا سبق سیکھنے کےلئے کافی تھا۔ دونوں جماعتیں سمجھ چکی تھیں کہ معاہدوں کے تحت حاصل شدہ حکومتوں کی پائیداری شاید اتنی ہی ہوتی ہے۔ اسطرح عوام کے ووٹ بھی پامال ہوتے ہیں اور ایک پارلیمنٹ کے ہوتے ہوئےبھی ایک آزاد سول اور جمہوری حکومت کبھی برسراقتدار نہیں آسکتی ۔ یہی وجہ تھی کہ پرویز مشرف حکومت کے ختم ہوتے ہی دونوں جماعتوں نے میثاق جمہوریت کیا۔ جس کے تحت یہ طےپایا کہ عوام کے ووٹوں سے آئی کوئی بھی منتخب حکومت پانچ سال کی آئینی مدت پوری کرے گی۔ اور پھر عوام اس کی کارکردگی کو دیکھ کر فیصلہ کریں گے کہ اسے دوبارہ موقع دیا جائے یا کسی اورسیاسی جماعت کو آزمایا جائے۔لیکن نوازشریف اس معاہد ے کی پاسداری نہیں کرسکے۔ اور سوئس حکومت کو خط نہ لکھنے پر پیپلزپارٹی کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے خلاف کالا کوٹ پہن کر سپریم کورٹ پہنچ گئے اور توہین عدالت کی درخواست دائر کردی۔ عدالت نے یوسف رضا گیلانی کو 30سیکنڈ کی علامتی سزا دے دی جس کے بعد وہ وزارت عظمیٰ کےلئے نا اہل ہوگئے۔ جس پر یہ تاثرظاہرہوا کہ ملک میں جمہوری اورسول نظام کی بالادستی کی کوششوں کو نوازشریف کی اس درخواست سے شدید نقصان پہنچا۔ اس سے میثاق جمہوریت کا شیرازہ بکھر گیا۔ گوکہ پیپلزپارٹی کی حکومت نے ملکی تاریخ میں پہلی بار آئینی مدت کی لیکن نوازشریف پر اسٹیبلشمنٹ کے ہاتھوں کھلونا بننے کی برسوں پرانی لگی چھاپ مٹ نہ سکی۔ اور پھر اس کا خمیازہ صرف تین ہی سال بعد نواز شریف کو اس وقت بھگتنا پڑا جبکہ نواز شریف حکومت کے دوران 2014میں عمران خان اورطاہر القادری ہزاروں کارکنوں کو لے کرپارلیمنٹ کے بغل میں واقع ڈی چوک پر آن بیٹھے۔اور126دن کا طویل دھرنا دے کر اس وقت کی برسراقتدارحکومت کو شدیدسیاسی نقصان پہنچایا۔ اس دھرنے پر الزام تھا کہ اسے ریاستی اداروں کی پشت پناہی حاصل تھی ۔یہ سب کچھ دیکھتے ہوئے نواز شریف اورملٹری لیڈر شپ کے مابین تعلقات خراب ہوتے چلے گئے۔اسی طرح 2016میں نوازشریف کے خلاف پانامہ کیس پر جے آئی ٹی کا قیام، نوازشریف اورمریم نواز کی پیشیوں اور اس دوران کی جانے والی پریس کانفرنسوں سے اس بات کا بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا تھا کہ سول اور ملٹری قیادت میں کس قدر خلیج حائل ہوچکی ہے۔ ڈان لیکس جیسے واقعات بھی ان اختلافات کی واضح تصویر ثابت ہوئے۔

تازہ ترین خبریں

نئے مون سون سسٹم کی پاکستان میں دھماکے دار انٹری۔۔ کراچی سے خیبر تک بارشیں ہی بارشیں ؟محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کردیا 

نئے مون سون سسٹم کی پاکستان میں دھماکے دار انٹری۔۔ کراچی سے خیبر تک بارشیں ہی بارشیں ؟محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کردیا 

بچوں کے مستقبل سے کھلواڑ۔۔پاکستان کی بڑی سرکاری یونیورسٹی نے جعلی ڈگریاں جاری کردیں، گندے دھندے میں کون کون ملوث ہے؟والدین اور طلبا یہ ضرور

بچوں کے مستقبل سے کھلواڑ۔۔پاکستان کی بڑی سرکاری یونیورسٹی نے جعلی ڈگریاں جاری کردیں، گندے دھندے میں کون کون ملوث ہے؟والدین اور طلبا یہ ضرور

ہمیں دور دراز علاقوں میں پٹرول پمپ کی فراہمی  کو یقینی بنانا چاہیے۔عارف علوی

ہمیں دور دراز علاقوں میں پٹرول پمپ کی فراہمی کو یقینی بنانا چاہیے۔عارف علوی

 ماسک صحیح طریقے سے نہ پہننے کامعاملہ ۔۔۔ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کو امریکی ائیرلائن  اتاردیاگیا 

 ماسک صحیح طریقے سے نہ پہننے کامعاملہ ۔۔۔ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کو امریکی ائیرلائن  اتاردیاگیا 

ویلکم ۔۔خوش آمدید۔۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کب پاکستان آ رہے ہیں۔۔؟ دشمنوں کی نیندیں حرام کردینےوالی خبر

ویلکم ۔۔خوش آمدید۔۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کب پاکستان آ رہے ہیں۔۔؟ دشمنوں کی نیندیں حرام کردینےوالی خبر

ظلم کی انتہائی ، بااثرملزمان نے لڑکی کا نازک اعضا کات دیا، افسوسناک واقعہ پاکستان کے کون سے شہر میں پیش آیا؟جانیے

ظلم کی انتہائی ، بااثرملزمان نے لڑکی کا نازک اعضا کات دیا، افسوسناک واقعہ پاکستان کے کون سے شہر میں پیش آیا؟جانیے

شہباز شریف اور بلاول بھٹو ٹھپہ مافیا کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں، فرخ حبیب

شہباز شریف اور بلاول بھٹو ٹھپہ مافیا کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں، فرخ حبیب

 سندھ میں کورونا ویکسینیشن نہ کروانے والوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

سندھ میں کورونا ویکسینیشن نہ کروانے والوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

 لاہور  ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے والے جہاز پر نا معلوم شخص کی جانب سے  لیزر لائٹ  مارنے کا واقعہ،  مقدمہ درج

لاہور ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے والے جہاز پر نا معلوم شخص کی جانب سے لیزر لائٹ مارنے کا واقعہ، مقدمہ درج

صوابی یونیورسٹی سے جعلی ڈگریاں جاری ہونے کا انکشاف،یونیورسٹی کے چار اہلکاروں کے ملوث ہونے کی تصدیق

صوابی یونیورسٹی سے جعلی ڈگریاں جاری ہونے کا انکشاف،یونیورسٹی کے چار اہلکاروں کے ملوث ہونے کی تصدیق

خیبر پختونخوامیں کل شام سے بارشوں اور تیز ہواؤں کا نیاسلسلہ شروع ہونے کاامکان

خیبر پختونخوامیں کل شام سے بارشوں اور تیز ہواؤں کا نیاسلسلہ شروع ہونے کاامکان

تحریک انصاف سے لوٹے اور آزاد امیدوار نکا ل دیں توباقی کون بچتاہے؟عظمیٰ بخاری نے ایسی بات کہہ دی جس سے کھلاڑی غصے سے آگ بگولہ ہوگئے

تحریک انصاف سے لوٹے اور آزاد امیدوار نکا ل دیں توباقی کون بچتاہے؟عظمیٰ بخاری نے ایسی بات کہہ دی جس سے کھلاڑی غصے سے آگ بگولہ ہوگئے

 مسلم لیگ (ن) نے  الیکشن کمیشن سے وفاقی وزراء کو سزا دینے کا مطالبہ کر دیا

مسلم لیگ (ن) نے الیکشن کمیشن سے وفاقی وزراء کو سزا دینے کا مطالبہ کر دیا

 انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہے کوئی ‏بھی الیکشن ہوں دھاندلی کےالزامات لگائےجاتےہیں۔سینیٹر فیصل جاوید 

 انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہے کوئی ‏بھی الیکشن ہوں دھاندلی کےالزامات لگائےجاتےہیں۔سینیٹر فیصل جاوید