"

اسرائیلی پارلیمنٹ میں اللہ پاک کا معجزہ! اذان کی آواز نے یہودیوں میں تھرتھلی مچا دی

اسرائیل میں اذان پر پا بندی لگانے کا خطرہ مگر اسرائیل کی پارلیمنٹ میں ہی اذان کی آواز گونج اٹھی ۔ اہم خبر سے آپ کو آگاہ کرتے چلیں کہ اسرائیل میں اذان پر پا بندی لگانے کے بارے میں سوچا جا رہا تہا ۔ جس کے بعد پارلیمنٹ میں اس پر ووٹینگ کروانے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ یہ ووٹینگ آج کی جانے تھی۔ جب ووٹینگ کا عمل شروع کیا گیا اور اراکین پارلیمنٹ نے ووٹ ڈالنا شروع کیا تو ایک مسلمان پارلیمنٹیرین کی باری آئی اور وہ ووٹ ڈالینے گئے تو انہوں نے ووٹینگ ڈیسک پو کھڑے ہو کر اذان دینا شروع کر دی ۔ جس پر پارلیمنٹ میں شور شرابہ مچ گیا۔ اسرائیلی اراکین پارلیمنٹ نے شور مچانا شروع کر دیا اور ایک ھنگامہ برپا ہو گیا۔ مگر مسلمان پارلیمنٹیرین نے مکمل اذان دی اور اذان کے بعد پڑھی جانے والی دعا بھی مکمل پڑھی۔ جس پر اسرائیلی اراکین آپے سے باہر ہو گئے اورچیختے چلاتے رہے۔ اسرائیل کے اس عمل سے ان کی اسلام دشمنی کھل کر سامنے آ گئی ہے۔ مسلمان پارلیمنٹیرین نے ان کی اس دشمنی کے باوجود ان کے سامنے کلمہ حق بلند کر دیا۔