"

پی پی پی کے ایم این ائے رمیش لال نے قانون کی دھجیاں اڑادیں۔

مشتعل ایم این اے نے موٹر وے کے درمیان کار کھڑی کر کے ٹریفک روک دی۔۔۔۔۔ موٹر وے پولیس کی جانب سے روکے جانے پر پاکستان پیپلز پارٹی کے ایم این اے رمیش لال نے مشتعل ہو کر موٹر وے ٹریفک بلاک کر دی ،،،،،،،،،،،،،،،، تفصیلات کے مطابق موٹر وے پر ایم 3 جڑانوالہ کے مقام پر رمیش لال نے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کی جس پر موٹر وے پولیس نے انھیں روک لیا، تاہم روکے جانے پر وہ مشتعل ہو گئے اور اپنی کار سڑک کے درمیان کھڑی کر کے ٹریفک رکوا دی۔ رکن اسمبلی جڑانولہ براستہ لاہور موٹر وے لاڑکانہ جا رہے تھے، ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر انھیں روکا گیا، ذرایع کا کہنا ہے کہ موٹر وے پولیس کی جانب سے رمیش لال کی کار کو لین وائلیشن پر روکا گیا تھا، جس پر انھوں نے احتجاج کیا، یہ واقعہ گزشتہ روز اس وقت پیش آیاجب پیپلز پارٹی کے ایم این اے کی جانب سےموٹروے پر لین وائلیشن کی گئی تھی پیپلز پارٹی کے ایم این اے کی جانب سے موٹر وے بلاک کرنے کی ویڈیو بھی وائرل ہوئی، رمیش لال بی ایم ڈبلیو 720 نمبر پلیٹ والی گاڑی میں سوار تھے، ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ تمام تر صورت حال میں موٹر وے پولیس نے کوئی بد اخلاقی نہیں کی اور پیشہ ورانہ رویہ اپنائے رکھا۔ تاہم رمیش لال نے اپنی کار موٹر وے کے عین درمیان کھڑی کر دی اور کارکنوں کے ساتھ دیگر گاڑیوں کو روکنے کی کوشش کرتے رہے، جب کہ موٹر وے پولیس ان کو روکتی رہی۔ ویڈیو میں موٹر وے پولیس اہل کار کو دیگر گاڑیوں کو بچانے کے لیے بھاگتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے، اہل کار نے جان پر کھیل کر دوسری گاڑیوں کو کسی بھی حادثے سے بچایا۔ جس کے بعد موٹروے پر ہنگامہ آرائی کرنے کے الزام میں پیپلز پارٹی کے رکن قومی اسمبلی رمیش لال کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیاہے ایم این اے رمیش لال کے خلاف فیصل آباد کے تھانہ لنڈیانوالہ میں موٹروے پولیس کے پٹرولنگ آفیسر امجد خان کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ ایم این اے رمیش لال کی گاڑی مسلسل تیسری لین میں چل رہی تھی، گاڑی کو روکنے پر رمیش لال غصے میں آ گئے اور گاڑی سڑک کے درمیان کھڑی کر کے ٹریفک بلاک کر دی۔