04:31 pm
موبائل فون کو قریب رکھ کر سونا کتنا خطرناک ہے،جانیں

موبائل فون کو قریب رکھ کر سونا کتنا خطرناک ہے،جانیں

04:31 pm

دِن بَھر کئی کئی گھنٹے موبائل فون استعمال کرنا، اب ایک عادت بن چُکی ہے اور چاہتے ہوئے بھی اس سے چھٹکارا پانا ناممکن نظر آتا ہے۔تازہ ترین تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ موبائل فون کا طویل دورانیے کیلئے استعمال مخصوص نوعیت کے سرطان اور صحت پر دیگر منفی اثرات مرتب کرنے کا سبب بن سکتا ہے۔بلاشبہ فون کی اہمیت و افادیت سے انکار ممکن نہیں، لیکن اس کے کئی ایسے مضر اثرات ہیں،
جو دورانِ استعمال ہی نہیں، بلکہ اس کے صرف ہماری رینج ہی میں ہونے کے سبب، صحت پر مرتّب ہوسکتے ہیں۔حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق کے بعد طبّی ماہرین نے موبائل فون صارفین کو خبردار کیا ہے کہ سونے سے قبل اپنا موبائل فون خود سے فاصلے پر رکھیں، کیوں کہ خاص طور پر یہ اسمارٹ فونز معلومات کے تبادلے کیلئے کم فریکوینسی والے ریڈیو سگنلز استعمال کرتے ہیں، خصوصاً اُس وقت جب موبائل فون صارف اسٹریمنگ یا بڑی فائل ڈاؤن لوڈ کررہا ہو۔ایسے میں اس سے جو شعائیں خارج ہوتی ہیں وہ سرطان، بانجھ پَن اور ذہنی امراض کا باعث بن سکتی ہیں، خاص طور پر کم عُمر بچّوں پر اس کے مضر اثرات بڑوں کی نسبت دو گنا زائد مرتّب ہوتے ہیں۔ماہرینِ صحت نے اس کے مضر اثرات سے محفوط رہنے کیلئے مشورہ دیا ہے کہ سونے سے ایک گھنٹے قبل موبائل فون کا استعمال ترک کردیا جائے اور خاص طور پر سوتے وقت اسے کم سے کم 3 سے 4 فٹ کے فاصلے پر رکھ کر سویا جائے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ کھانا کھاتے ہوئے بھی فون استعمال کرنے سے گریز کیا جائے کہ اس سے دماغی صحت متاثر ہوتی ہے اور ذہنی کمزوری کے خطرات بڑھ جاتے ہیں۔اگر آپ بھی موبائل فون اپنے سرہانے رکھتے ہیں یا پھر کھانا کھاتے ہوئے بھی اس کا استعمال جاری رکھتے ہیں، تو فوراً سے پیش تر اپنی اس عادت کو ترک کردیں۔

تازہ ترین خبریں