05:35 pm
،مائیکرو سافٹ نے صارفین سے کیااپیل کردی

،مائیکرو سافٹ نے صارفین سے کیااپیل کردی

05:35 pm

مائیکروسافٹ نے اپنے صارفین سے درخواست کی ہے کہ وہ انٹرنیٹ سرفنگ کے لیے کسی زمانے کے مقبول ترین براوزرانٹرنیٹ ایکسپلوررکواستعمال کرناچھوڑ دیں کیونکہ اس میں موجودبڑی سیکورٹی کمزوری سے ہیکرز کے لیے کمپیوٹرز کاانتظام سنبھالناآسان ہوجاتاہے ،مائیکروسافٹ کی جانب سے جاری بیان میں کہاگیاہے کہ سیکورٹی کمزوری میموری کواس طرح کرپٹ کرسکتی ہے کہ ایک حملہ آوراس کاکوڈبدل سکتاہے ، اگر صارف پھر ایڈمنسٹریٹو یوزر رائٹس کے ساتھ لاگ ان ہوتا ہے
تو ہیکر کے لیے اس کمزوری کور استعمال کرکے متاثرہ سسٹم کا کنٹرول سنبھالنا آسان ہوجاتا ہے'۔مائیکرو سافٹ کے مطابق 'ہاں، اس کمزوری کو آپ کے خلاف آسانی سے استعمال کیا جاسکتا ہے'۔اور یہ پہلا موقع نہیں جب مائیکرو سافٹ کی جانب سے صارفین پر زور دیا گیا ہے کہ وہ انٹرنیٹ ایکسپلورر سے جان چھڑا لیں۔رواں سال فروری میں کمپنی کے ایک سیکیورٹی محقق نے لوگوں سے درخواست کی تھی کہ وہ انٹرنیٹ ایکسپلورر کو بطور ڈیفالٹ براؤزر استعمال کرنا چھوڑ دیں جبکہ اپریل میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ انٹرنیٹ ایکسپلورر کو استعمال نہ بھی کرتے ہوں مگر کمپیوٹر میں اس کی موجودگی ہی سیکیورٹی کے لیے خطرہ ہے۔اب نئے بیان میں کمپنی نے کہا 'ایک حملہ آور اس براؤزر کی کمزوری سے فائدہ اٹھا کر پروگرامز انسٹاگرام کرسکتا ہے، ڈیٹا دیکھ سکتا ہے، بدل یا ڈیلیٹ کرسکتا ہے یا مکمل یوزر رائٹس والے نئے اکاؤنٹس بناسکتا ہے'۔مائیکرو سافٹ کے مطابق گوگل کے تھریٹ اینالیسز گروپ نے اس کمزوری سے کمپنی کو آگاہ کیا۔مائیکروسافٹ نے اپنا نیا براؤزر ایج متعارف کرانے کے بعد انٹرنیٹ ایکسپلورر کو متروک قرار دے دیا تھا اور اس کے لیے سپورٹ بھی ختم کردی گئی تھی۔اب پرانی ایپس تو انٹرنیٹ ایکسپلورر پر چلائی جاسکتی ہیں مگر طویل المعیاد بنیادوں پر زیادہ بہتر، محفوظ اور اسمارٹ طریقہ تو یہی ہے کہ کسی جدید براؤزر پر منتقل ہوجائیں۔مگر دلچسپ بات یہ ہے کہ ابھی بھی انٹرنیٹ ایکسپلورر کو استعمال کرنے والوں کی تعداد 10 فیصد سے زیادہ ہے جو کہ مائیکرو سافٹ کے نئے براؤزر ایج، اوپیرا اور سفاری سے زیادہ ہے۔

تازہ ترین خبریں