05:42 pm
 خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہوسکتے ہیں

خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہوسکتے ہیں

05:42 pm

اسلام آباد(ویب ڈیسک )این ڈی ٹی وی کی ایک رپورٹ کے مطابق استعمال شدہ کوکنگ آئل کو دوبارہ استعمال کرنا جہاں پیسے اور وقت ضائع ہونے سے روکتا ہے وہیں اس کے بے شمار نقصانات بھی ہیں جو ہمارے علم میں ہونا بے حد ضروری ہیں۔ کوکنگ آئل کے ایک سے زیادہ بار استعمال کے نقصانات:ہمارے یہاں گھروں میں کوکنگ آئل کا ایک سے زیادہ مرتبہ استعمال بہت عام سی بات ہے، اسی لیے ہم نے کبھی غور بھی نہیں کیا کہ ایسا کرنا ہماری صحت کے لیے کتنا نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے۔
سرطان کے جراثیم پیدا کرنا: استعمال شدہ کوکنگ آئل کو بار بار استعمال کرنے سے آئل میں وہ عناصر یا جراثیم شامل ہونے کا خطرہ ہے جو وجہ کینسر (سرطان) بنتے ہیں۔اس کے علاوہ استعمال شدہ کوکنگ آئل کے بار بار استعمال سےانسان میں موٹاپے، دل کی بیماری اور ذیابیطس ہونے کے امکانات بھی بڑھ جاتے ہیں۔ایل ڈی ایل کولیسٹرول کا بڑھ جانا: کولیسٹرول کی تین قسمیں ہیں: ٹوٹل کولیسٹرول، ایل ڈی ایل کولیسٹرول اور ایچ ڈی ایل کولیسٹرول۔ ماہرین صحت کے مطابق ایل ڈی ایل کولیسٹرول کی مقدار 70mgdl سے کم ہونا چاہیے۔جب خون میں ایل ڈی ایل کولیسٹرول کی مقدار بڑھ جائے تو یہ نہایت ہی خطرنات ہوجاتا ہے۔ یہ کولیسٹرول انسان کے خون کی شریانوں میں بڑھ کر خون کے بہاؤ کو روک دیتا ہے، جس سے دل کی بیماری، فالج، اور سینے میں درد کی شکایات بڑھ جاتی ہیں۔کولیسٹرول سے متعلقہ بیماریوں سے بچنے کے لیے کھانے پکانے والے تیل کو ایک سے زیادہ مرتبہ استعمال کرنے سے گریز کا مشورہ دیا گیا ہے۔تیزابیت کی شکایت: این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اگر کسی شخص کو معدے میں جلن یا تیزابیت کا مسئلہ ہے تو یقیناً اس کی وجہ استعمال شدہ کوکنگ آئل کو بار بار استعمال کرنا ہے۔ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ایسے افراد کھانا پکانے والے تیل کو ایک سے زیادہ مرتبہ استعمال کرنا چھوڑ دیں اور پھر دیکھیں اگر انہیں معدے میں جلن یا تیزابیت کی شکایت نہیں ہوتی تو اس کا مطلب انہیں استعمال شدہ کوکنگ آئل کا بار بار استعمال ترک کردینا چاہیے۔اس کے علاوہ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ معدے میں جلن اور تیزابیت کے مرض میں مبتلا افراد کو جنک فوڈ اور باہر کے کھانوں سے بھی اجتناب برتنا چاہیے۔

تازہ ترین خبریں