مصنوعی ذہانت کا حامل روبوٹ الیکشن میں حصہ لے گا
  4  دسمبر‬‮  2017     |     سائنس/صحت

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)نیوزی لینڈ میں پہلی مرتبہ مصنوعی ذہانت کے حامل روبوٹ کو الیکشن لڑانے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ٹیکنالوجی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ملک میں 2020ء میں ہونے والے آئندہ انتخابات میں مصنوعی ذہانت کے حامل روبوٹ ’’سیم‘‘ کو بطور سیاست دان پیش کیا جائے گا۔برطانوی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سیم دنیا کا پہلا ورچوئل سیاست دان ہوگا جس سے صارفین فیس بک میسنجر کے ذریعے رابطہ کر سکیں گے۔مصنوعی ذہانت کے حامل اور چیٹنگ کی صورت میں حلقے کے لوگوں کو سوالوں کے

جواب دینے والے اس چیٹ بوٹ نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ کوئی بھی فیصلہ کرتے وقت علاقے سے تعلق رکھنے والے عوام کے بہتر مفاد میں کوئی بھی اقدام کرے گا۔سیم کو تیار کرنے والے سائنسدان نک جیریٹسن کا تعلق نیوزی لینڈ کے علاقے مارل بورو سے ہے۔’’ٹیک اِن ایشیا‘‘ جریدے سے بات چیت کرتے ہوئے جیریٹسن کا کہنا تھا کہ سیم ایک نئی ابتدا کرے گا لیکن ہم قانون کی حد میں رہ کر کام کر رہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ فیس بک پر علاقہ مکینوں سے بات چیت کرکے یہ روبوٹ کئی باتیں سمجھ رہا ہے اور اس میں معاملہ فہمی بھی پیدا ہو رہی ہے۔روبوٹ لوگوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہیں یہ بتاتا ہے کہ ’’میں حقائق اور آراء کی بنیاد پر فیصلے کرتا ہوں لیکن جان بوجھ کر کبھی جھوٹ بولوں گا اور نہ ہی کبھی آپ تک غلط معلومات پہنچائوں گا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved