صارف امیر ہے یا غریب ،اب فیس بک فیصلہ کرے گا
  8  فروری‬‮  2018     |     سائنس/صحت

کیلیفورنیا(نیوز ڈیسک )فیس بک اب صارفین کی سماجی اور معاشی حیثیت کا اندازہ بھی لگائے گا اور بتائے گا کہ صارف کا تعلق امیر طبقے سے ہے یا غریب طبقے سے۔بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق فیس بک نے اپنے سسٹم کو اپ گریڈ کرنے کے لیے ایک قسم کی ٹیکنالوجی پیٹنٹ کی درخواست دی ہے جس کے تحت صارف سے اس کا ذاتی ڈیٹا حاصل کیا

جائے گا، مثلاً صارف سے اس کی تعلیمی قابلیت، حق ملکیت، انٹرنیٹ استعمال کرنے کا اوسط وقت اور دیگر معلومات حاصل کرکے اس ٹیکنالوجی کے ذریعے از خود انہیں 3 اقسام میں تقسیم کرکے متعلقہ گروپ میں شامل کردیا جائے گا۔صارف کی مالی حیثیت کا اندازہ لگانے والی اس ٹیکنالوجی میں خاص الگورتھم استعمال کیا جائے گا جس کا پیٹنٹ فیس بک نے اپنے نام کرنے کی درخواست دائر کی ہے۔یہ پیٹنٹ صارف کی سماجی اور معاشی حیثیت کا اندازہ لگا کر اس کی سماجی معاشی حیثیت تجویز کرے گا جس کے بعد مذکورہ صارف کو امیر، متوسط یا غریب طبقے میں شامل کرلیا جائے گا۔ اس اقدام کا مقصد صارفین کو ان کی مالی حیثیت کے مطابق اشتہارات فراہم کرنا ہے تاکہ فیس بک متعلقہ طبقے تک اشتہارات باآسانی پہنچا سکے اور اپنے اہداف کا تعین سہل اندازمیں کرنے کی خاصیت حاصل کرسکے۔فیس بک اس نئے اقدام کے ذریعے سے ان تیسرے فریقین (تھرڈپارٹی) کی مدد کرے گا جس کے ذریعے ان اداروں کو متعلقہ حلقوں تک اپنے اشتہارات پہنچانے میں مدد ملے گی۔ یہ ٹیکنالوجی فیس بک نے اشتہارات کے لیے ذیادہ فوکس صارفین کی درجہ بندی کے لیے تیار کی ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
100%
پسند ںہیں آئی
 


 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved