دوپہرکے کھانے کے بعداس سنت نبوی ؐ کی پیروی آپ کودماغی طورپرصحت مندبنادے گی
  9  فروری‬‮  2018     |     سائنس/صحت

نیویارک(ویب ڈیسک) ماہرین نے دوپہر کو ایک گھنٹے کی نیند یا قیلولہ کو صحت کے لیے فائدہ مند قرار دے دیا، خاص طور پر یہ عادت دماغی امراض سے تحفظ دیتی ہے، قیلولہ یا دوپہر کو کچھ دیر سونا سنت نبوی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم ہے۔امریکن ہیلتھ ان ایجنگ فاؤنڈیشن کی تحقیق میں یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ اگر دوپہر میں ایک گھنٹہ سونا صحت کیلئے بہت فائدے مند ہے، تحقیق کے دوران تین ہزار افراد کا جائزہ لیا گیا، جس کے بعد یہ بات سامنے آئی کہ یہ عادت نہ صرف انسان کی یاداشت بہتر دماغ بناتی بلکہ عمر بڑھنے سے بھی بچاتی ہے

۔تحقیق میں یہ بھی بتایا گیا کہ دوپہر میں ایک گھنٹے سونا دماغ کے لیے فائدہ مند ہے تاہم اگر یہ دورانیہ اس سے زیادہ یا کم ہو تو فائدے مند نہیں۔محققین نے بتایا کہ جیسے جیسے عمر بڑھنے لگتی ہے تو دماغی کارکردگی میں کمی آنے لگتی ہے لیکن دوپہر کو سونے کی عادت ان افعال کو بہتر رکھنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے، جبکہ الزائمر یا دیگر امراض کا خطرہ بھی کم ہوجاتا ہے۔تحقیق کے مطابق جو لوگ دوپہر میں ایک گھنٹے سونے کے عادی ہوتے ہیں، دوسروں کے مقابلے انکی یاداشت، ریاضی کے مختلف سوالات اور دیگر چیزوں کو زیادہ بہتر طریقے سے کرپاتے ہیں۔چاق و چوبند بچوں کیلئے ضروری ہے کہ وہ24 گھنٹوں میں11 سے 13 گھنٹے نیند لیں، بچوں کی دوپہر کے کھانے کے بعد ایک گھنٹے کی نیند ذہنی قوت بڑھاتی ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved