سوچ کی لہروں سے حرکت کرنیوالی روبوٹک ٹانگیں
  10  مارچ‬‮  2018     |     سائنس/صحت

لاہور (نیوز ڈیسک) سائنس دانوں نے ایسی روبوٹک ٹانگیں تیار کر لی ہیں جنہیں صرف سوچ کی لہروں کے ذریعے حرکت میں لایا جاسکتا ہے اگر یہ منصوبہ قابل عمل ہوگیا تو صحت کی دنیا میں انقلاب آجائیگا۔رپورٹ کے مطابق ایک کمپنی نے روبوٹک ٹانگیں بنالی ہیں جنہیں صرف سوچ کی لہروں

کے ذریعے حرکت میں لایا جاسکتا ہے ۔ روبوٹک ٹانگیں مصنوعی اعضا تیار کرنیوالی جاپانی کمپنی سائبر ڈائن نے بنائی ہیں۔ یہ کمپنی ایک عشرے سے جدیدترین مصنوعی اعضا تیار کر رہی ہے جنھیں (Hybrid Assistive Limb )(ہال ) کہا جاتا ہے۔سوچ کی لہروں سے حرکت میں لائی جانیوالی یہ ٹانگیں ان مریضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے بنائی گئی ہیں جو فالج، حادثے ، حرام مغز کو پہنچنے والی چوٹ یا کسی بھی وجہ سے ٹانگوں کو حرکت دینے سے معذور ہوگئے ہوں۔ روبوٹ ٹانگوں پر مشتمل یہ پورا نظام پہن کر مفلوج یا متاثرہ شخص بآسانی کھڑا ہوجاتا ہے کیوں کہ اس میں کمر تک سپورٹ دی گئی ہے ۔یہ پورا سسٹم جدید آلات، سینسرز اور مصنوعی ذہانت کی ٹیکنالوجی پر مشتمل ہے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved