”لا حول ولا قوة الا باللہ“ میشاءشفیع کو متنازعہ لباس پہن کر تصویر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنا مہنگا پڑ گیا
  13  ‬‮نومبر‬‮  2017     |      شوبز

لندن (ویب ڈیسک) میشاءشفیع ایسی شخصیت ہیں جنہوں نے پاکستانی شوبز انڈسٹری میں گلوکاری، اداکاری اور ماڈلنگ کے شعبوں میں دھوم مچائی اور اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا۔میشاءشفیع ناصرف شوبز کے میدان میں خوب سرگرم رہتی ہیں بلکہ سوشل میڈیا کا بھی کافی استعمال کرتی ہیں اور مختلف تصاویر اور ویڈیوز اپ لوڈ کر کے مداحوں سے داد وصول کرتی رہتی ہیں۔ لیکن اب کی بار انہوں نے جو تصویر اپ لوڈ کی اس نے سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا کر دیا اور سوشل میڈیا صارفین بھڑک اٹھے جنہوں نے میشاءشفیع کی خوب ”درگت“ بنا ڈالی۔انہوں نے انسٹاگرام پر اپنی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ”کر دکھایا! کیا خوابیدہ رات ہے اور میرے لئے اعزاز کی بات ہے! رافائل گیلری میں داخل ہونے اور پرفارمنس دینے سے پہلے ناقابل یقین لمحات۔۔۔“

یہ تصویر شیئر ہوتے ہی سوشل میڈیا صارفین نے ”گولہ باری“ شروع کر دی اور ایسے ایسے کمنٹس کئے کہ میشاءشفیع نے خوابوں میں بھی نہ سوچا ہو گا۔ نائلہ نے لکھا ”یہ بھی نہ پہنتی“ ایک صارف نے لکھا ” یہ کس طرح کا لباس ہے“ایک اور صارف نے لکھا ”بہت بری لگ رہی ہے، توبہ“ایک صارف نے خوفناک لکھا تو ایک نے ”ولا حول ولا قوة الا باللہ“ پڑھا۔ ایک صارف نے تو بدتمیزی کی حد ہی پار کردی اور لکھا ”کھسرا“ جبکہ ایک اور صارف نے بکواس چھچھوری کہہ ڈالا۔ایک صارف نے لکھا ”یہ ہماری نمائندگی کرتے ہیں۔۔۔؟؟؟ ان پر شرم آتی ہے“ ۔۔۔ ایک اور صارف نے ’چڑیل‘ کہا تو کسی نے ”لکھ دی لعنت“ کہنے سے بھی گریز نہیں کیا جبکہ ایک اور صارف نے لکھا ”یہ بھی اپنے آپ کو خوبصورت لڑکیوں میں شامل کرتی ہے۔۔۔ ہاہاہاہاہا۔۔۔ چڑیل“”لا حول ولا قوة الا باللہ“ میشاءشفیع کو متنازعہ لباس پہن کر تصویر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنا مہنگا پڑ گیا، سوشل میڈیا صارفین نے ”درگت“ بنا دی،کون سا لباس پہن رکھا تھا؟ دیکھ کر آپ کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ جائیں گی


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
100%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

شوبز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved